ایران اپنی قومی سلامتی پر مذاکرہ  یا سمجھوتہ نہیں کرتا ہے: ترجمان خارجہ

تہران، ارنا – ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ یوروپی ممالک کو اپنے وعدوں پر عمل کرنے کے ساتھ جوہری معاہدے پر اپنی خیر سگالی ثابت کرنا ہوگا اور پچھلی صحیح راہ کو جاری رکھنے کے لئے ایک نیا موقع فراہم کیا گیا ہے۔ دوسرے فریق اپنے وعدوں پر عمل کرے اور اسلامی جمہوریہ ایران اپنی ذمہ داریوں کو پورا کرے گا۔

یہ بات "سعید خطیب زادہ" نے پیر کے روز اپنی ہفتہ وار آن لائن پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ یورپ اپنی حیثیت اور صلاحیتوں کو پہچانتا ہے اور اپنے تعلقات کی حدت پر غور کرے اور یورپ نے اپنے وعدوں پر عمل نہیں کیا، یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ نے جوہری معاہدے پر عملدرآمد کرنے کی ضمانت دی اور بعض ممالک جیسی جرمنی اپنے وعدوں پر قائم نہیں کرسکا جو ہمارے خطوں میں پیش کیا گیا ہے۔
خطیب زادہ نے اس بات پر زور دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اپنی قومی سلامتی پر مذاکرہ یا سمجھوتہ نہیں کرے گا اور ایران اپنے حقوق اور ذمہ داریوں سے بخوبی واقف ہے اور اس نے دوسری فریق کو اپنے حقوق اور ذمہ داریوں کی یاد دلانی ہے۔ جو زیادہ سے زیادہ دباؤ کے ساتھ حاصل نہیں ہوا دوسرے طریقوں سے حاصل نہیں ہوتا ہے۔
انہوں نے ممکنہ مذاکرات میں بعض علاقائی ممالک کی موجودگی کی درخواست کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ کچھ ممالک نے وائٹ ہاؤس کی صدارت سے اقتدار کے خاتمے کے دوران اپنے مقاصد کو حاصل کرنے کی پوری کوشش کرکے کچھ دن سیکیورٹی خریدنے کے لئے اپنا اپنے لوگوں کا پیسہ خرچ کیا مگر یہ واضح ہے کہ وہ آج پریشان ہیں۔
ایرانی ترجمان نے کہا کہ ان ممالک کو تہران کا پیغام ہے کہ ایران خطے میں استحکام کا ایک لنگر ہے اور اسلامی جمہوریہ ایران خطے کا ایک تاریخی ملک ہے اور اس نے اپنے بڑے بھائی کی طرح دوسروں کی غلطیوں کو بھی نظرانداز کرنے کی کوشش کی ہے ، لیکن انہیں یہ جاننے کی ضرورت ہے کہ ان کی حیثیت کیا ہے اور وہ کس حد تک بات کرسکتے ہیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha