عالمی جوہری ادارہ خفیہ معلومات کے تحفظ کا ذمہ دار ہے: ایران

لندن، ارنا- ویانا کی بین الاقوامی تنظیموں میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے مستقل مندوب نے نطنز جوہری تنصیبات میں سینٹرفیوجز کے تین نئے جھرن کی تنصیب کے ایرانی منصوبے سے متعلق خفیہ معلومات کے عدم تحفظ کی تنقید کی۔

ان خیالات کا اظہار "کاظم غریب آبادی" نے جمعہ کے روز ایک ٹوئٹر پیغام میں کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ عالمی جوہری ادارے کی خفیہ رپورٹ جس میں ایران کے خفیہ خط کے مندرجات تھے اس سے پہلے کہ بورڈ آف گورنرز کے ممبر بھی اس کا سراغ لگا سکیں میڈیا میں شائع ہوئی۔

غریب آباد نے کہا کہ عالمی جوہری ادارہ صرف تبدیلیوں کو آپ ڈیٹ کرنے کا ذمہ دار نہیں بلکہ اسے ممالک کے خفیہ معلومات کے تحفظ کا ذمہ دار ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگر جوہری ادارے اور ممبر ممالک کی اس حوالے سے تنقید نہ کرنے کا فیصلہ ہے تو آئی اے ای اے کو اپنے رازداری کے طریقہ کار بشمول خط و کتابت کے آلے کے طور پر داخلی گیویٹم سائٹ کے استعمال پر نظر ثانی کی ضرورت ہے۔

یہ پہلا موقع نہیں ہے کہ ایران کی جوہری سرگرمیوں سے متعلق عالمی جوہری ادارے کی خفیہ رپورٹس سامنے آگئی ہیں۔

اس سے پہلے بھی ویانا کی بین الاقوامی تنظیموں میں تعینات روس کے مستقل مندوب میخائیل اولیانوف نے میڈیا میں بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کی خفیہ رپورٹس کی اشاعت پر احتجاج کیا تھا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha