پاکستان میں قائم ایرانی سفارتخانے میں فخری زادہ کی ورچوئل یادگار کتاب پر دستخط کی تقریب

اسلام آباد، ارنا- پاکستان میں قائم اسلامی جمہوریہ ایران کے سفارتخانے میں اعلی ایرانی سائنسدان شہید فخری زادہ کی ورچوئل یادگار کتاب پر دستخط سے متعلق ان لائن تقریب کا انعقاد ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق، جمعرات سے ہی پاکستان میں تعنیات مختلف ممالک کے سفیروں، سفارتکاروں اور بین الاقوامی تنظیموں کے عہدیداروں کے الکٹرانک پیغامات اور ایملز موصول ہو رہے ہیں۔

یہ ورچوئل یادگار کتاب آج (جمعہ) کے اختتام تک کھلی رہے گی اور ایران سفارتکار اور نمائندے جوہری اور دفاعی سائنسدان کے بزدلانہ قتل کے موقع پر سیاسی اور مذہبی شخصیات کے تعزیتی پیغامات کو وصول کرتے ہیں۔

اب تک شام، عراق، لبنان، فلسطین، کیوبا، روس، نیپال، افغانستان، کویت، قطر، اردن، تیونس، الجیریا، لیبیا اور یوکرین کے سفیروں نے الیکٹرانک پیغامات کے ذریعے ایرانی حکومت اور عوام کیساتھ فخری زادہ کی شہادت پر تعزیت کا اظہار کر لیا۔

خیال رہے کہ پاکستانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے گزشتہ روز کے دوران اعلی ایرانی سائنسدان شہید محسن فخری زادہ کے قتل کی مذمت کی۔

انہوں نے ایرانی حکومت اور عوام بالخصوص فخری زادہ کے اہل خانوں سے ان کی شہادت پر تعزیت کا اظہار کرلیا۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے بھی پاکستانی کی سیاسی اور مذہبی جماعتوں نے کراچی میں منعقدہ ایک کانفرنس کے دوران، شہید فخری زادہ کے قتل کی مذمت کی تھی

یہ بات قابل ذکر ہے ایران کے ایٹمی پروگرام کے بانی سائنسدان محسن فخری زادہ کو 27 نومبر میں تہران میں ایک دہشتگردانہ حملے میں شہید کر دیا گیا۔

ایران کے دارالحکومت تہران کے علاقے دماوند میں مسلح افراد نے ایرانی سائنسدان کی گاڑی پر حملہ کیا؛ حملہ آوروں نے ان کی گاڑی کے قریب دھماکا اور فائرنگ کی جس کے نتیجے میں سائنس دان محسن فخری زادہ شدید زخمی ہوگئے، اُنہیں قریبی اسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ جانبر نہ ہوسکے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 5 =