نیدرلینڈز فخری زادہ کے قتل میں ملوثین کی جواب دہی کا مطالبہ کرے

تہران، ارنا- دی ہیگ میں قائم ایرانی سفارتخانے نے ایک بیان میں اس بات پر زور دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران دنیا کے سارے ممالک بالخصوص انسانی حقوق کے دعویدار ممالک بشمول نیدرلینڈز سے توقع رکھتا ہے کہ اس قتل کی مذمت کرتے ہوئے اس واقعے میں ملوثین کی جوابدہی کا مطالبہ کرے۔

اس بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ایرانی محکمہ دفاع کی ریسرچ اور انوویشن تنظیم کے سربراہ اور اعلی ایرانی سائنسدان محسن فخری زادہ کے قتل میں ناجائز صہیونی ریاست کے کردار کے ٹھوس شواہد موجود ہیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ ناجائز صہیونی ریاست کے وزیر اعظم نیتن یاہو نے 2018 میں فخری زادہ کا نام لیتے ہوئے کہا کہ "اس نام کو یاد رکھیں!"؛ اور دیگر صہیونی عہدیداروں نے دعوی کیا ہے کہ انہوں نے کئی سالوں سے ڈاکٹر فخری زادہ کا سراغ لگایا ہے اور یہاں تک کہ امریکی خفیہ ذرائع نے بھی کہا ہے کہ اس قتل میں ناجائز صہیونی ریاست کا ہاتھ ہے۔

ایرانی سفارتخانے کے بیان میں ملک کے دیگر جوہری سائنسدانوں کے قتل میں صہیونی ریاست کے کردار کا ذکر کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ اس بزدلانہ قتل میں صہیونی ریاست کا کردار واضح ہے۔

بیان میں اس بات پر زور دیا گیا ہے کہ فخری زادہ کا قتل تمام بین الاقوامی قوانین اور انسانی اصولوں اور اقدار کی کھلی خلاف ورزی ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران دنیا کے سارے ممالک بالخصوص انسانی حقوق کے دعویدار ممالک بشمول نیدرلینڈز سے توقع رکھتا ہے کہ اس قتل کی مذمت کرتے ہوئے اس واقعے میں ملوثین کی جوابدہی کا مطالبہ کرے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 6 =