'حرکة‌النضال' گروپ اور سعودی انٹلیجنس سروس کے مابین تعلقات کی دستاویزات شائع کی گئیں

تہران، ارنا – ایرانی وزارت انٹلیجنس نے سعودی انٹلیجنس سروس کے ساتھ 'حرکة‌النضال' گروپ کے براہ راست رابطے سے متعلق سے کچھ دستاویزات جاری کردی ہیں۔

ایرانی وزارت انٹلیجنس کے شعبہ تعلقات عامہ نے 'حرکة‌النضال' گروپ اور سعودی انٹلیجنس سروس کے درمیان براہ راست رابطے کے لیے کچھ دستاویزات اور خط و کتابت شا‏ئع کی۔

قابل ذکر ہے کہ امام زمان علیہ السلام کے گمنام سپاہیوں نے ایک خصوصی آپریشن کے دوران 12 نومبر کو علیحدگی پسند گروہ'حرکة‌النضال' کے سرغنڈے 'فرج اللہ چعب ' کی شناخت اور گرفتار کرلیا۔

وزارت انٹلیجنس کے مطابق صہیونی ریاست اور سعودی عرب کی حمایت یافتہ علیحدگی پسند گروہ'حرکة‌النضال' کے سرغنڈے نے حالیہ برسوں میں تہران اور خوزستان میں کئی اور دہشتگردی کارروائیوں کی منصوبہ بندی کی تھی جو امام الزمان علیہ السلام کے گمنام فوجیوں کی ذہانت اور ہوشیاری سےیہ گروپ ناکام ہوگیا۔

22 ستمبر 2018 کو ایرانی جنوبی شہر اہواز میں دہشتگردی حملے کا اصل ذمہ دار'حرکة‌النضال' گروپ تھا جس حملے کے نتیجے میں 25 افراد شہید اور 65 افراد زخمی ہوگئے ۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 7 =