ایران پابندیوں کے باوجود ڈرون کی تیاری میں سپر پاور بن گیا: یوریشین ٹائمز

تہران، ارنا- یوریشین ٹائمز نے ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ ایران کیخلاف امریکی شدید پابندیوں کے وجود، وہ ملکی ماہرین کی کوششوں اور ریورس انجینئرینگ کے ذریعے ڈرون کی تیاری کے شعبے میں سپر پاور بن گیا۔

رپورٹ میں مزید کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے 2018 میں ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی اور پھر ایران کیخلاف پابندیاں لگانے سے ایرانی ترقی کی راہ میں رکاوٹیں حائل کیں۔

تا ہم ایران کو دفاعی ساز و سامان کی برآمدات اور درآمدات میں بہت مشکل حالات سامنے کے با وجود وہ اپنی دفاعی صلاحیتوں بالخصوص ڈرون کی تیاری میں صلاحیتوں کو فروغ دینے میں کامیاب ہوگیا ہے۔

یوریشین ٹائمز کی رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ ایران نے حالیہ دونوں میں "مہاجر-6" ڈرون کی نقاب کشائی کی ہے؛ دفاعی تجزیہ کار "ڈیویڈ اکس" کے مطابق اس ڈرون کو صرف ظاہر سے جائزہ نہیں لیا جا سکتا۔

ان کا کہنا ہے کہ یہ نیا ڈرون فائبر گلاس کی اپنی سادہ ظاہری شکل کے پیش نظر شاید پیچیدہ  دیکھائی نہیں دیتا ہے؛ لیکن اگر ایک مناسب ڈرون کو مناسب تعداد میں استعمال کیا گیا تو دشمن افواج کیلئے خطرہ لاحق ہوسکتا ہے۔

اس کے علاوہ گزشتہ سال کے دوران، تہران میں "کیان" ڈرون کی نقاب کشائی کی گئی ہے اور دفاعی عہدے داروں کا کہنا ہے کہ یہ ڈرون 1500 فٹ تک 600 میل سے زیادہ اڑ سکتا ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران میں اس سے پہلے بہت سارے ڈرونز سے نقاب کشائی کی گئی ہے جن میں سے "مبین"، "مہاجر" اور "ابابیل" کا نام لیا جاسکتا ہے۔

ایرانی حکام کے مطابق ان ڈرونز کو ملکی سرحدوں کو خطرے سے بچانے اور مادر وطن کے دفاع کیلئے انتہائی اہم کردار حاصل ہے۔

مڈل ایسٹ سینٹر کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر برائے تجزیہ اور رپورٹنگ "ست۔ جی فراتسمان" نے کہا ہے کہ ایران، ڈرون کی تیاری کے شعبے میں سپر پاور بن گیا ہے۔

اس کے علاوہ لندن میں سرگرم رپورٹر"توماس ہاردینگ" کا عقیدہ ہے کہ ایران کیخلاف امریکی شدید پابندیوں کے وجود، وہ ملکی ماہرین کی کوششوں اور ریورس انجینئرینگ کے ذریعے ڈرون کی تیاری کے شعبے میں سپر پاور بن گیا۔

یوریشین ٹائمز کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایران، امریکہ، برطانیہ، ترکی اور اسرائیل سمیت ڈرون کی تیاری میں سپر پاور بن گیا ہے تا ہم بھارت اس شعبے میں پیچھے رہ گیا ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 1 =