ایرانی فلموں کی متعدد عالمی میلوں میں نمائش ہوگی

تہران، ارنا- ایرانی فنکاروں کی بنائی گئی فلموں کو ترکی، کینیڈا، افغانستان اور امریکہ میں منعقدہ فلمی میلوں میں نمائش کیلئے پیش کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق ایرانی ہدایتکار "افشین ہاشمی" کی بنائی گئی فلم Goodbye Shirazi girl کو افغانستان کے صوبے ہرات میں خواتین سے متعلق منعقدہ بین الاقوامی فلم فیسٹیول میں نمائش کیلئے پیش کیا جائے گا۔

منعقدہ اس فلم فیسٹیول میں 27 ممالک کے فنکاروں کی بنائی گئی 72 فلموں کو نمائش کیلئے پیش کیا جائے گا۔

اس کے علاوہ دیگر ایرانی فنکار کی بنائی گئی شارٹ فلم The sheep will devour us کو ترکی کے شہر ازمیر میں منعقدہ ایسٹرن یورپ انٹرنیشنل مووی ایوارڈ میں سب سے بہترین شارٹ فلم کے ایوارڈ سے نوازا گیا۔

اس فلم کی کہانی طاہرہ نامی لڑکی کی زندگی پر مبنی ہے جنہوں نے کم عمری میں شادی کی ہے اور اب وہ اپنی بہن کو اس طرح کے تلخ تجربے سے بچنے کی کوشش کر رہی ہیں۔

نیز ایرانی ہدایتکار "ایمان داوری" کی بنائی گئی فلم Sleep No More کو لاس اینجلس ایشین فلم فیسٹیول میں بہترین اسکرین پلے کیلئے گولڈن ڈائمنڈ ایوارڈ کیلئے نامزد کیا گیا۔

اس فلم فیسٹیول کا کرونا وائرس کے پھیلاؤ کی وجہ سے لاس اینجلس میں آن لائن انعقاد کیا جاتا ہے۔

اس کے علاوہ ایرانی فلم ساز "دلاور دوستانیان" کی بنائی گئی شارٹ فلم Hunter کو کینیڈا میں منعقدہ Hecare فلم فیسٹیول میں نمائش کیلئے پیش ہوگی۔

ہنٹر ایک رومانٹک ڈرامہ فلم ہے؛ جس کی صوبے ایلام کے مضافات میں واقع شکارچی نام دشت میں فلم بندی کی گئی ہے۔

یہ دستاویزی فلم آگاماست نامی چھپکلی والے خاندان کی دو چھپکلیوں کی محبت کی کہانی ہے؛ جن کی سرزمین میں ایک شکاری آنے کی آمد سے ان کی زندگی کا نظام درہم برہم ہوتا ہے۔

اس فلم کو اس سے پہلے ہانگری، روس اور اٹلی کے فلمی میلوں میں نمائش کیلئے پیش کیا گیا تھا۔

کینیڈا میں منعقدہ Hecare فلم فیسٹیول کا موضوع زیادہ تر ماحولیات اور انسانی حقوق سے متعلق ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 8 =