ایران لیبارٹری میں جانوروں کے ایمبریو کے کٹس کا تیار کرنے والا دوسرا ملک بن گیا

تہران، ارنا- ایک ایرانی علم پر مبنی کمپنی نے لیبارٹری میں جانوروں کے ایمبریو کے کٹس کی تیاری میں کامیابی حاصل کی ہے اور اب امریکہ کے بعد ایران بھی آئی وی ایف کٹس کا دوسرا تیار کرنے والا ملک بن گیا ہے۔

ان ویٹرو فرٹیلائزیشن (آئی وی ایف) طریقہ کار میں لیبارٹری میں مصنوعی طور پر بچوں کی پیدائش کے تولیدی عمل کا آغاز کیا جاتا ہے؛ اس طریقے کو ٹیسٹ ٹیوب بے بی بھی کہا جاتا ہے۔

آئی وی ایف طریقہ کار میں ہونے والی پیش رفت معدومیت کے خطرے سے دوچار نسلوں کے تحفظ کیلئے راہ ہموار کرنے اور انسانوں اور جانوروں کی بیماریوں کے خلاف جنگ میں مددگار ثابت ہو گی۔

اس منصوبے کو نافذ کرنے والی ایرانی کمپنی، آئی وی ایف کے کلچر میڈیم کو تیار کرنے اور اسے 5 امپورٹڈ امریکن کلچر میڈیا سے تبدیل کرنے کیلئے لیبارٹری کے جنین کی تیاری کے تمام مراحل کو مسلسل 5 کلچر میڈیم کی بجائے ایک کلچر میڈیم کیساتھ انجام دینے میں کامیاب ہوگئی ہے۔

اس کمپنی کا اسٹریٹجک منصوبہ یہ ہے کہ وہ ملک میں دیسی تکنیکی علم کی پیداوار اور بڑے پیمانے پر پیداوار کے سلسلے میں بڑی صنعتی کمپنیوں میں پروڈکشن تکنیکی معلومات کی منتقلی کے لئے مطالعہ اور تحقیق کرے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha