مسلمانوں کی توہین، اظہار رائے کی آزادی کا غلط فائدہ اٹھانا ہے: ظریف

تہران، ارنا- ایرانی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ انتہاپسندوں کے گھناؤنے جرائم کی خاطر 9۔1 ارب مسلمان اور ان کے مقدسات کی توہین کرنا در اصل اظہار رائے کی آزادی کا غلط فائدہ اٹھانا ہے۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد ظریف" نے آج بروز پیر کو ایک ٹوئٹر پیغام میں کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ مسلمان "فرقہ نفرت" [وہابیت] کے سب سے بڑے شکار ہیں؛ وہ فرقہ جس کو سامراجیت نے طاقت دی اور ان کو دنیا کے ہر کونے میں بھیج دیا۔

 ظریف نے کہا کہ انتہاپسندوں کے گھناؤنے جرائم کی خاطر 9۔1 ارب مسلمان اور ان کے مقدسات کی توہین کرنا در اصل اظہار رائے کی آزادی کا غلط فائدہ اٹھانا ہے جس سے انتہاپسندی کا مزید فروغ ہوگا۔

یاد رہے کہ فرانس کے صدر میکرون نے اپنے حالیہ بیان میں دہشت گردی کو اسلام سے جوڑا اور گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کو آزادی اظہار رائے سے منسوب کیا تھا۔

فرانس میں پیغمبر اسلام کے خاکوں کی دوبارہ اشاعت اور بعد میں صدر میکروں کی جانب سے ان کے دفاع میں بیان کے بعد سے دنیا کے کئی ممالک میں فرانسیسی مصنوعات کے بائیکاٹ کی مہم کے ساتھ ساتھ مذمتی پیغامات بھی سامنے آ رہے ہیں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 3 =