ملکی وار بحری ہتھیار غیر ملکی ماڈل کیساتھ انتہائی مسابقتی ہیں: ایران

تہران ، ارنا - ایرانی فوج کی بحریہ کے کمانڈر نے کہا ہے کہ ایرانی بحری ہتھیاروں میں غیر ملکی ماڈل کے مقابلے میں اعلی مسابقتی طاقت حاصل کی ہے اور ہماری طاقت اس مقام اور خودمختاری میں بڑھ چکی ہے کہ ہمیں اب ہتھیاروں کی خریدنے کی ضرورت نہیں ہے اور اسلحہ کی پابندی ہماری بحریہ کے لئے ایک مذاق کی طرح ہے۔

ایڈمیرل "حسین خانزادی" نے ایران کے خلاف اسلحہ کی پابندیوں کے خاتمے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہماری بحریہ اس مقام اور آزادی پر پہنچی ہے کہ ہمیں اب ہتھیاروں کی خریدنے کی ضرورت نہیں اور اسلحہ کی پابندی ہماری بحریہ کے لئے ایک مذاق کی طرح ہے۔
ایڈمیرل خانزادی نے کہا کہ انہیں کچھ ادوار میں اسپیئر پارٹس اور ہتھیاروں کی بہت زیادہ ضرورت ہے مگر آج ہماری بحریہ پر کوئی پابندی ہے یا نہیں کوئی موثر مسئلہ نہیں ہے کیونکہ ہم ہر ہتھیار تیار کرنے میں کامیاب ہوچکے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ کچھ سال پہلے تک ہمیں ٹارپیڈو خریدنے کے لئے کوئی جگہ نہیں مل سکی لیکن مقامی ٹارپیڈو کی تعمیر اور کامیاب کوششوں کی بدولت اس ضرورت کو مکمل طور پر پورا کیا گیا ہے۔
انہوں نے اس بات  پر زور دیا کہ ہماری مصنوعات اعلی معیار اور قیمت کی کشش کی سطح پر ہیں اور اس بات کا بہت زیادہ امکان ہے کہ وہ غیر ملکی ماڈل کے ساتھ مقابلہ کرنے میں کامیاب ہوں گے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 5 =