ایران اور افغانستان کے درمیان نقل و حمل اور توانائی کے شعبوں میں تعاون کی ترقی

تہران، ارنا – ایرانی وزیر توانائی نے کہا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان ہرات خواف ریلوے کے افتتاح، کسٹم تعاون ، سرحدی منڈیوں اور توانائی کے شعبوں میں تعاون کو بڑھ جائے گا۔

یہ بات "رضا اردکانیان" نے پیر کے روز ارنا نیوز  ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
اس موقع پر انہوں نے قریب مستقبل میں ایران اور افغانستان کے درمیان اقتصادی تعاون کے مشترکہ کمیشن کے چھٹے اجلاس کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس اجلاس میں ہرات خاف ریلوے کے اجراء ، کسٹم تعاون ، سرحدی منڈیوں اور توانائی کے امور پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔
اردکانیان نے کہا کہ ایران افغانستان مشترکہ اقتصادی کمیشن کی ذمہ داری وزارت خارجہ کی تجویز اور وزرا کی کونسل کی منظوری کے ساتھ وزارت توانائی کو منتقل کردی گئی ہے۔
انہوں نے کہا کہ اس کے مطابق ، سرگرمیاں شروع ہوگئی ہیں جن میں کابل میں بجلی اور ٹیلی مواصلات کی پہلی خصوصی نمائش کا انعقاد بھی شامل ہے جس میں 70 سے زیادہ ایرانی کمپنیوں نے شرکت کی۔
انہوں نے کہا کہ مشترکہ کمیشن کے چھٹے اجلاس کا جلد ہی کابل میں انعقاد کیا جائے گا جس میں اسلامی جمہوریہ ایران اور افغانستان کے درمیان مشترکہ سرنگ اور باہمی سرمایہ کاری کے ذریعے بجلی ، توانائی اور قابل تجدید توانائی کے شعبوں میں باہمی تعاون پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔
ایرانی وزیر توانائی کہا کہ اس اجلاس میں ہرات خواف ریلوے کے قیام اور کسٹم تعاون ، سرحدی منڈیوں کے مسئلے اور دو طرفہ اچھے معاشی واقعات کے سلسلے سے متعلق امور پر بھی مذاکرات کیا جائے گا۔
انہوں نے مزید کہا کہ اس نشست میں ایگزیکٹو کام کو تیز کرنے کے لئے کسی حتمی معاہدے کے مقام تک پہنچنے کی کوشش کی جائے گی۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 15 =