پڑوسیوں کیساتھ آزادانہ تعلقات کا فروغ ایران کی خارجہ پالیسی ہے

اسلام آباد۔ ارنا - پاکستان میں اسلامی جمہوریہ ایران کے سفارتخانے نے اعلان کیا کہ تہران دوسرے ممالک بالخصوص ہمسایہ ممالک کے ساتھ تجارت اور آزادانہ تعامل کو اپنی خارجہ پالیسی کا ایک اہم حق اور اصل سمجھتا ہے۔

اسلام آباد میں ایرانی سفارتخانے نے جمعہ کے روز اپنے جاری کردہ ایک بیان میں کہا کہ تہران دوسرے ممالک بالخصوص ہمسایہ ممالک کے ساتھ تجارت اور آزادانہ تعامل کو اپنی خارجہ پالیسی کا ایک اہم حق اور اصل سمجھتا ہے۔

اس بیان میں مزید آیا ہے کہ اسلحہ کی پابندیوں کے خاتمے کے ساتھ ،اس سے متعلقہ مالی لین دین اور فوجی تعاون میں کوئی قانونی رکاوٹ نہیں ہے۔

اس بیان نے جوہری معاہدے کی پانچویں برسی کے موقع پر اسلامی جمہوریہ کے بین الاقوامی تعلقات پر کچھ پابندیوں کے خاتمے کا حوالہ دیتے ہوئے مزید کہا کہ 25 اگست 2020 کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس میں ایرانی اسلحہ کی پابندی میں توسیع اور اس سلسلے میں ایک نئی قرار داد منظور کرنے میں امریکہ کی ناکامی کے پیش نظر اقوام متحدہ کے ممبران کو قرارداد 2231 پر عمل درآمد اور تعمیل کرنے کی ضرورت ہے۔

ایرانی سفارتخانے نے اس بیان میں اعلان کیا ہے کہ ایران پاکستان کیساتھ کثیر الجہتی تعلقات کو بڑھانے پر تیار ہے۔

ایک عظیم اور آزاد قوم کے خلاف جابرانہ اور غیر قانونی پابندیوں کے استعمال کیلیے امریکہ کی بین الاقوامی تنہائی نے ایک بار پھر یہ ظاہر کیا ہے کہ عالمی برادری کا نقطہ نظر باہمی احترام ، سفارتکاری ، بات چیت اور کثیرالجہتی کے ذریعے عالمی مسائل کو حل کرنے پر مبنی ہے.

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 9 =