باکو اور یریوان کے درمیان جنگ کے خاتمے کیلئے کوئی بھی اقدام کی حمایت کرتے ہیں: ایران

تہران، ارنا – ایرانی حکومت کے ترجمان نے کہا ہے کہ ہم جمہوریہ آذربائیجان اور آرمینیا کے درمیان جنگ کے خاتمے اور لوگوں کے قتل کو روکے کے لئے کوئی بھی اقدام کی حمایت کریں گے۔

یہ بات "علی ربیعی" نے منگل کے روز اپنی پریس کانفرنس میں صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے کہا کہ قرہ باغ میں جو بھی فیصلہ لیا جاتا ہے تنازعات میں شامل تمام فریقوں کو موجود اور اس میں شامل ہونا ضروری ہے۔
ربیعی نے کہا کہ دہشت گردی کا وجود اور کسی بھی ملک کے ذریعہ خطے میں دہشت گردوں کی موجودگی اس ملک کو نقصان پہنچے گا حالانکہ قرہ باغ میں تنازعات کی فریقین نے اس سلسلے میں دعوے کیے ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ ہم امن کی سمت ایک قدم کی حیثیت سے ناگورنو اور قرہ باغ خطے میں دشمنیوں کے خاتمے کا خیرمقدم کرتے ہیں اور اپنے ہمسایہ ممالک سے بین الاقوامی قانون اور علاقائی سالمیت کے احترام پر مبنی سنجیدہ مذاکرات میں حصہ لینے اور کوئی بھی اقدام جو جنگ بندی کو روک کرے گا، اٹھانے سے اجتناب کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں۔
انہوں نے اسلامی جمہوریہ ایران کی حکومت کی شہریوں کے قتل پر گہری تشویش اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ان واقعات کو عدم دہرانے کی ضرورت پر زور دیا جبکہ خطے اور ہمارے ممالک کے عوام کو پہلے سے کہیں زیادہ امن و سکون کی ضرورت ہے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 5 =