جمہوریہ آذربائیجان اور آرمینیا کے مابین جنگ بندی کی خلاف ورزی پر ایران کا رد عمل

تہران۔ ارنا – ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے آذربائیجان اور آرمینیا کے مابین جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کے جواب میں کہا ہے کہ ہم دونوں فریقین سے جنگ بندی پر عمل کرنے، بین الاقوامی قانون کے دائرہ کار میں بات چیت کرنے، ایک دوسرے کی علاقائی سالمیت کا احترام کرنے اور مقبوضہ شہروں کو خالی کرنا دوبارہ شروع کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں۔

سعید خطیب زادہ نے آج بروز پیر کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے جمہوریہ آذربائیجان اور جمہوریہ ارمینیا کے مابین حالیہ تنازعات میں اعلان کردہ جنگ بندی کی خلاف ورزی کی مذمت کرتے ہوئے فریقین کو صبر و تحمل کا مظاہرہ کرنے کی دعوت دی۔

انہوں نے شہروں کے اہم انفراسٹرکچر اور شہریوں اور رہائشی علاقوں پر راکٹ حملوں کی مذمت کرتے  سوگوار خاندانوں سے ہمدردی کا اظہار کیا۔

خطیب زادہ نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے ایک بار پھر فریقین سے جنگ بندی پر عمل پیرا ہونے ، بین الاقوامی قانون کے دائرہ کار میں اپنی بات چیت کا آغاز کرنے اور ایک دوسرے کی علاقائی سالمیت کا احترام کرنے اور مقبوضہ شہروں کو خالی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم اس سلسلے میں خطے میں پائیدار اور مستقل حل تک پہنچنے اور مذاکرات کو آسان بنانے پر تیاری کا اعلان کرتے ہیں۔

جمہوریہ آذربائیجان اور آرمینیا کے وزرائے خارجہ نے دو رات قبل روس کی ثالثی کے ساتھ جنگ ​​بندی کے معاہدے پر اتفاق کیا تھا ، لیکن موجودہ تنازعات سے ظاہر ہوتا ہے یہ معاہدہ زیادہ مستحکم نہیں ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 4 =