ٹرمپ کی توہین نے ایرانی عوام کو متحد کردیا: اعلی ایرانی سفارتکار

تہران، ارنا - ایران کی خارجہ تعلقات اسٹریٹجک کونسل کے چیئرمین نے کہا ہے کہ ٹرمپ کے حالیہ بیانات نے حکومت درندہ صفتی کا مظاہرہ کیا اور  یہ توہین نہ صرف امریکی حکومت کے اہداف کے حصول پر کوئی اثر نہیں ہوا بلکہ ایرانی عوام کو امریکی جبر اور غنڈہ گردی سے نمٹنے کیلیے پہلے کہیں زیادہ متحد کردیا۔

یہ بات سید کمال خرازی نے ارنا کے نمائندے کے ساتھ گفتگوکرتے ہوئےکہی۔

اعلی ایرانی سفارتکار اور سابق وزیر خارجہ نے  امریکی محکمہ خزانہ کی جانب سے 18 ایرانی بینکوں پر عائد پابندی کے بارے میں کہا کہ امریکہ ان نئی پابندیوں عائد کرنے اور دباؤ دوگنا کرنے کے ساتھ ایران کو گٹھنے ٹیکنےپر مجبور کرنا چاہتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ اس مقصد کے حصول کیلیے جوہری معاہدے سے دستبردار ہوگئے، ایران کے خلاف پابندیاں عائد کیں اور جنرل سلیمانی کو قتل کردیا۔

ایرانی سابق وزیر خارجہ نے کہا کہ ان پابندیوں سے وائٹ ہاوس کا مقصد ایران نظام کا تختہ الٹنا ہے لیکن خوش قسمتی سے ایرانی عوام کی مزاحمت کے ساتھ امریکہ اس مقصد میں ناکام ہوگا۔

خرازی نے کہا کہ امریکہ کی تمام سازشوں اور دباؤ کے باوجود ایران نے مزاحمت کی ہے بازار میں لوگوں کے ہر قسم ضروری سامان موجود ہیں اگرچہ مہنگا ہے اور لوگوں کو معاشی دباؤ کا سامنا ہے۔

ٹرمپ کی توہین ایران کے حوالےسے اپنے اہداف حاصل نہ کرنے کےلیے ان کے غم و غصے کی علامت ہے۔

انہوں نے کہا کہ سب سے اہم بات ایرانی عوام کی مزاحمت ہے اور خدا کے فضل و کرم سے ہم امریکی جبر اور غنڈگردی کے مقابلہ میں اپنا مقصد حاصل کریں گے ، اور ہم انہیں اپنا مقصد حاصل کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔

یاد رہے کہ امریکی محکمہ خزانہ کے دفتر برائے غیر ملکی اثاثوں کے کنٹرول نے جمعرات کے روز ایرانی عوام کو گھٹنوں تک لانے کے مقصد کے ساتھ امین کیپیٹل کمپنی، زرعی ، ہاؤسنگ ، ورکرز ویلفیئر ، شہری ، نیا اکانومی ، رسالت ، حکمت ایرانی اور ایران زمین بینکوں پر نئی پابندیاں عائد کیں۔

اس بیان میں اسلامی علاقائی تعاون ، کارافرین ، مڈل ایسٹ ، مہر ایران کریڈٹ انسٹی ٹیوشن ، پاسارگاد ، سامان ، سرمایہ ، کوآپریٹو ڈویلپمنٹ  اور سیاحت بینکیں اس فہرست بھی شامل ہیں۔

ارنا کے مطابق امریکی صدر نے  ایک ریڈیو چینل کو دیے گئے انٹرویو میں فحش اور ہرزہ سرائی کے ساتھ ایک بار پھر ایران کو دھمکیاں دیتے ہوئے دنیا کو اپنی شخصیت، پوزیشن کی سطح کو دکھایا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 10 =