آئی ایم او کے سیکرٹری جنرل امریکہ کیخلاف ایرانی کی قانونی شکایت کا تعاقب کریں گے

تہران، ارنا- ایرانی بندرگاہوں اور میری ٹائم آرگنائزیشن کے سی ای او نے کہا ہے بین الاقوامی میری ٹائم آرگنائزیشن کیجانب سے امریکہ کیخلاف قانونی کارروائی کی درخواست کے بعد آئی ایم او سیکرٹری جنرل نے اس مسئلے کو تعاقب کرنے کا وعدہ دیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم بندرگاہ اور سمندری سرگرمیوں کو ملک کے لئے کبھی بھی تشویش کا باعث نہیں ہونے دیں گے۔

ان خیالات کا اظہار "محمد راستاد" نے ایرانی بندرگاہوں اور میری ٹائم آرگنائزیشن کے سیکرٹریز کے اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

منعقدہ اس اجلاس میں ایرانی وزیر برائے مواصلات اور شہری ترقی "محمد اسلامی" نے بھی حصہ لیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ نے تجارت اور جہاز رانی پر بُرے اثرات مرتب کیے اور ایرانی بندرگاہیں بھی اس سے مستثنیٰ نہیں ہیں تا ہم اس تنظیم نے اس حوالے سے خصوصی اقدامات اٹھائے۔

راستاد نے رواں سال کے دوران ایرانی بندرگاہوں اور میری ٹائم آرگنائزیشن کیجانب سے اٹھائے گئے اقدامات سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ ملکی ماہرین کے ذریعے 240 ملین یورو کی مالیلت پر مشتمل 83 جہازوں کی تعمیر کا سمندری صنعت میں تبدیلی آنے کے منصوبے کے سلسلے میں آغاز کیا گیا ہے۔

انہوں نےمزید کہا کہ رواں سال کے ابتدائی 6 مہینوں کے دوران 35 سمندری منصوبوں کا نفاذ کیا گیا ہے۔

راستاد نے شہید رجائی بندرگاہ اور امیر آباد بندرگاہوں کی پروجیکٹ کی ترقی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ چابہار پورٹ کی توسیع کا منصوبے پر بھی بخوبی عمل درآمد کیا جا رہا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ رواں سال کے دوران، بندرگاہوں کی کنٹینر کی گنجائش 8 ملین ٹن، لوڈنگ اور ان لوڈنگ کی گنجائش 264 ملین ٹن، بحری مسافروں کی گنجائش 10.6 ملین ٹن، مسافر بیڑے کی صلاحیت 8،000 نشستوں اور تجارتی بیڑے کی گنجائش 7.2 ملین ٹن تک پہنچ جائے گی۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 7 =