ایران میں نان آئل مصنوعات کی برآمدات 5۔13 ارب ڈالر تک پہنچ گئیں

زنجان، ارنا- نائب ایرانی وزیر برائے تجارت، کان کنی اور صنعت نے کہا ہے کہ جبکہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ کی وجہ سے بین الاقوامی تجارت میں 14 فیصد کی کمی آئی تو ایران میں رواں سال کے ابتدائی 6 مہینوں کے دوران، نان آئل مصنوعات کی برآمدات کی مالی شرح 5۔13 ارب ڈالر تک پہنچ گئی۔

ان خیالات کا اظہار "حمید زاد بوم" نے منگل کے روز صوبے زنجان میں معاشی امور، روزگار کی پیداواری اور برآمدات کی توسیع سے متعلق منعقدہ ایک اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر انہوں نے آئل مصنوعات کی قیمت میں کمی لانے کے پیش نظر نان آئل مصنوعات کی برآمدات کی اہمیت پر زور دیا۔

انہوں نے رواں سال کے ابتدائی 6 مہینوں کے دوران ملکی برآمدات میں 34 فصد کی کمی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ صوبے زنجان میں اسی عرصے کے دوران، برآمدات میں 11 فیصد کی کمی آئی ہے لیکن اگر ترکی کی سرحد 2 ماہ کے لئے بند نہیں کی گئی تھی اور سیسہ اور زنک کی اضافی قیمت کے میدان میں کوئی پریشانی نہ ہوتی تو اس صوبے کی برآمدات میں اضافہ ہوسکتا تھا۔

زاد بوم نے کہا کہ کرونا کے پھیلاؤ کی صورتحال اور ملک پر عائد پابندیوں کے پیش نظر گزشتہ 6 مہینوں کے دوران، ملک میں 7۔16 ارب ڈالر مصنوعات کی درآمدات ہوئی ہیں جن میں آہستہ آہستہ مزید کمی آئے گی۔

انہوں نے بین الاقوامی تجارت میں 14 فیصد کی کمی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ کرونا وبا کی صورتحال کی وجہ سے وہ ممالک جو کرونا سے زیادہ متاثر ہوگئے اور ان کی زمینی سرحدیں بند کردی گئیں انھیں برآمدات میں مزید کمی کا سامنا کرنا پڑا۔

زادبوم نے کہا کہ ہمارے ملک میں 15 پڑوسی ممالک کو 100 ارب ڈالر مصنوعات کی برآمدات کی صلاحیت ہے اور اس شعبے میں مزید سرگرم ہونے کی ضرورت ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 2 =