پابندیوں کے شکار ممالک نے ہم سے بہتر کورونا کو کنٹرول کیا ہے: امریکی سول کارکن

نیویارک، ارنا – ایک امن پسند امریکی کارکن نے کورونا سے ڈونلڈ ٹرمپ کا شکار اور اس ملک میں کورونا کی روک تھام میں ناکامی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ غیر انسانی پابندیوں کا شکار ہونے والے ممالک نے ہم سے بہتر کورونا کو کنٹرول کیا ہے۔

یہ بات  یونائیٹڈ نیشنل اینٹی وار کولیشن (يواین اے سی ) کے کوآرڈینیٹر جو لومبارڈو نے ارنا کے ساتھ خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہی۔
انہوں نے کہا کہ میں خوش نہیں ہوں کہ ٹرمپ یا کسی اور کورونا سے مبتلا ہوئے ۔ اگر ٹرمپ کورونا کی روک تھام کیلیے موثر کارروائی کرتے تھے تو بہت سے لوگ اب زندہ تھے ، لیکن انہوں نے موثر اقدام کی بجائے چین پر تنقید کی۔

انہوں نے مزید بتایا کہ پابندیوں کا شکارہونے والے ممالک نے کرونا کے خلاف ہم سے بہتر اور مؤثر طریقے سے کام کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ چین نے جب اس وائرس کے ڈی این اے  ڈھانچے کو دریافت کیا اسے دنیا کے تمام ممالک کو دیا جبکہ امریکہ کبھی ایسا نہیں کرتا ہےاور وہ پیسہ کمانے کے لیے کورونا ویکسین کی تیاری کی کوشش کرتا ہے۔ اور امریکہ نے مدد کرنے کے بجائے دوسرے ممالک پر پابندیاں عائد کردی ہیں۔

اس امریکی امن کارکن نے ایران اور کورونا سے لڑنے والے دوسرے ممالک کے خلاف امریکی پابندیوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ وائرس کی کوئی سرحد نہیں ہے اور بین الاقوامی تعاون کے ذریعہ اس پر قابو پایا جانا چاہئے لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ کیوبا ، وینزویلا اور ایران کے خلاف پابندیوں اور سہولیات کی کمی کے باوجود ان ممالک نے کورونا کو کنٹرول کرنے کے لئے بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔

لومبارڈو نے کہا کہ ٹرمپ نے میڈیکل کمیونٹی کی رائے کے خلاف کام کیا اور اب اس وائرس کا شکار ہوگیا ہے۔ وہ امریکہ اور پوری دنیا میں اس وائرس کے پھیلاؤ کا ذمہ دار ہے۔

انہوں نے امریکہ کے وسیع مالی وسائل کے باوجود کرونا سے انتقال ہونے والوں کی بڑھتی ہوئی تعداد کی وجہ کے حوالے سے ایک سوال کے جhttps://twitter.com/IRNAURDU1واب میں کہا کہ مسئلہ امریکی سرمایہ دارانہ طبی نظام کا ہے۔ حکومت مارکیٹ کی سرمایہ کاری کے ساتھ کورونا وائرس پر قابو پانے کی کوشش کر رہی ہے۔

جمعہ کے روز باضابطہ طور پر اعلان کیا گیا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کرونا کا شکار ہوگیا ہے جس نے گذشتہ سات ماہ سے مسلسل وائرس کو نظرانداز کیا ، ماسک پہننے سے انکار کردیا اور حفظان صحت سے متعلق ہدایات کی نافرمانی کی ، اب وہ اسپتال میں زیر علاج ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 0 =