ایرانی صوبے فارس کا عالمی امن اور سیاحت کے کنونشن کی میزبانی کیلئے تیار

شیراز، ارنا – ایرانی صوبے فارس تمام ثقافتی اور تاریخی پس منظر میں اقوام عالم کے درمیان اخلاق ، تعامل اور دوستی جیسی عظیم الشان اور قابل فخر انسانی اقدار کو تبادلے کی وجہ سے 2021 کے عالمی امن کنونشن کے قابل میزبان ثابت ہوسکتا ہے۔

یہ بات "سید مجتبیٰ علوی" نے امن اور دوستی کے لئے سیاحت کے عنوان سے عالمی ویبنار (سائبر اسپیس میں ویب پر مبنی کانفرنس) میں خطاب کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے کہا کہ صوبے فارس منفرد اور قابل ذکر صلاحیتوں سمیپ 11 عالمی اور تین ہزار قومی سطح پر رجسٹرڈ کاموں کے ساتھ سیاحت کی صنعت میں ایک خاص مقام رکھتا ہے جو مناسب اور موثر منصوبہ بندی اور دنیا کے ٹولز اور ٹکنالوجی کے استعمال سے دنیا بھر کے ناظرین اور سیاحوں کا تعارف کروا سکتا ہے۔
علوی نے فارس کی عالمی امن کنونشن کی میزبانی کے لئے تیاریوں پر اقوام عالم کے نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران پوری تاریخ میں عالمی امن کا علمبردار رہا ہے اور اسے جاری رکھنے کے لئے اپنے کوشش کرتا ہے۔
تفصیلات کے مطابق ، امن اور دوستی کے لئے بین الاقوامی سیاحت ویبینار کا اتوار کے روز ایران اور بھارت کے ثقافتی مشیروں سمیت سیاحت کی صنعت میں کچھ عہدیداروں اور کارکنوں کی موجودگی میں انعقاد کیا گیا۔
اس ویبینار میں سائبر اسپیس کے ذریعے سیاحوں کو راغب کرنے کے لئے صوبے فارس اور شہر شیراز کے تاریخی اور مذہبی پرکشش مقامات ، سیاحت سامعین کے سامنے پیش کرنے اور ان کے تعارف کے سب سے اہم طریقوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 13 =