ایران نے مجرمانہ پالیسیوں میں امریکہ کےساتھ سمجھوتہ کرنے  پر انتباہ کیا

لندن - ارنا - جنیوا میں ایران کے سفیر نے امریکی عائد یکطرفہ پابندیوں کو دوسرے ممالک کے خلاف انسانی حقوق کی پامالی کے پھیلاؤ کی بنیادی وجہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ کچھ مغربی ممالک جو ان حقائق کو نظرانداز کرنے کے ساتھ ایران کے خلاف بیان جاری کرتے ہیں کو واشنگٹن کی مجرمانہ سرگرمیوں کے شریک ہیں۔

یہ بات اسماعیل بقایی ہامانہ نے انسانی حقوق کونسل کے 45 واں اجلاس میں مغربی ممالک کے ایک گروپ کے ایران میں انسانی حقوق کی صورتحال پر تنقید کیلیے مشترکہ بیان کے ردعمل پر کہی۔

اس بیان میں عائد کیے جانے والے الزامات میں ٹھوس شواہد اور حقائق کا فقدان ہے۔ وہ الزامات زیادہ تر کچھ افراد کی فائلوں کے بارے میں مسخ شدہ اور نامکمل معلومات پر مبنی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ انسانی حقوق ، شہری حقوق ، سیاسی حقوق ، معاشی حقوق ، معاشرتی اور ثقافتی حقوق ایک دوسرے سے منسلک اور ایک دوسرے کے لازم و ملزوم ہیں۔ ماضی میں یہ ثابت ہوا ہے کہ غیر ملکی مداخلت فطری طور پر ان حقوق کے فروغ کے منافی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران انسانی حقوق کے فروغ میں دلچسپی رکھنے والی ممالک کے ساتھ احترام کی بنیاد پر بات چیت کرنے کا خواہاں ہے اقوام متحدہ کے انسانی حقوق بشمول ہائی کمشنر کے دفتر کے ساتھ ، ہماری بات چیت طویل اور نتیجہ خیز رہی ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
8 + 7 =