عراق سے کوئی خطرہ ہمسایہ ممالک تک پہنچنے کی اجازت نہیں دیں گے

تہران، ارنا - عراقی وزیر خارجہ نے اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ اسٹریٹجک تعلقات کی اہمیت پر زور دیا اور کہا ہے کہ ہم عراق سے کوئی خطرہ ہمسایہ ممالک تک پہنچنے کی اجازت نہیں دیں گے۔

یہ بات ایران کے دورے پر آئے ہوئے "فواد حسین" نے گزشتہ روز اپنے ایرانی ہم منصب "محمد جواد ظریف" کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

اس موقع پر انہوں نے دونوں ممالک کے درمیان اسٹریٹجک تعلقات کی اہمیت پر زور دیا اور کہا کہ تہران بغداد تعلقات قدیم تاریخ اور مشترکہ جغرافیہ سے فائدہ اٹھاتے ہیں اور یہ صرف معاشی اور سیاسی مفادات تک ہی محدود نہیں ہیں۔
اس ملاقات کے دوران ایرانی وزیر خارجہ نے عراق کے سیاسی عمل اور خودمختاری کے لئے اسلامی جمہوریہ ایران کی حمایت کا اعلان کرتے ہوئے اس ملک کی سلامتی کی اہمیت پر زور دیا۔
ظریف نے ایرانی سفارتی مقامات پر حملوں اور عراق میں ایرانی سفارتکاروں کے وقار اور سلامتی کو یقینی بنانے کی ضرورت کا حوالہ دیتے ہوئے اس مقامات پر کسی بھی حملے کو ناقابل قبول قرار دے کر اس کی مذمت کی اور اس طرح کی کارروائیوں کو روکنے کی ضرورت پر زور دیا۔
انہوں نے عراقی سرزمین پر جنرل قاسم سلیمانی کے قتل میں امریکی حکومت کے دہشت گردانہ اقدام پر تبصرہ کرتے ہوئے عراقی حکومت سے اس سلسلے میں ذمہ داری ادا کرنے کا مطالبہ کیا۔
تفصیلات کے مطابق، عراقی وزیر خارجہ فواد حسین ہفتے کے روز ایرانی دارالحکومت تہران پہنچ گئے جنہوں نے اپنے دو روزہ دورے پر ایرانی عہدیداروں سے ملاقات کی جس میں علاقائی پیشرفت اور ایران عراق تعاون پر تبادلہ خیال کیا۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 16 =