اپنے عراقی ہم منصب سے جنرل سلیمانی کے قتل پر بات چیت کی: ظریف

تہران،ارنا- ایرانی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ انہوں نے ایران کے دورے پر آئے ہوئے اپنے عراقی ہم منصب سے ایک ملاقات میں امریکہ کے ہاتھوں جنرل سلیمانی کے قتل اور ایرانی کی سفارتی مقامات پر حملے سے متعلق بات چیت کی ہے۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد ظریف" نے ہفتے کے روز ایک ٹوئٹر پیغام میں کیا اور کہا کہ اپنے دوست عراقی وزیر خارجہ "فواد حسین" کی میزبانی کرنے سے خوش ہوں۔

ظریف نے کہا کہ ملاقات میں دونوں فریقین نے باہمی تعلقات کے فروغ سمیت امریکہ کے ہاتھوں جنرل سلیمانی کے قتل اور ایرانی کی سفارتی مقامات پر حملے سے متعلق بات چیت کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس ملاقات میں ایرانی سفارتی مقامات کے تحفظ کی اہمیت پر زور دیا گیا۔

واضح رہے کہ عراقی وزیر خارجہ نے ظریف سے ملاقات کے بعد صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی سے ملاقات کی۔

وہ اپنے دورے ایران کے موقع پر ملک کے دیگر حکام سے بھی الگ الگ ملاقاتیں کریں گے۔

 یہ بات قابل ذکر ہے کہ فواد حسین نے وزیراعظم "المصطفی کاظمی" کے حالیہ دورے ایران کے موقع پر دونوں فریقین کے درمیان طے پانے والے معاہدوں کے نفاذ سے متعلق ایران دورہ کیا ہے۔

ان کے اس دو روزہ دورے کے موقع پر ایران اور عراق کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون سمیت علاقے کی تازہ ترین تبدیلیوں کا جائزہ لیا جائے گیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 5 =