24 ستمبر، 2020 8:51 PM
Journalist ID: 2393
News Code: 84053265
0 Persons
ایران اور روس کے درمیان فوجی تعاون جاری رہے گا: ظریف

ماسکو، ارنا – ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ ایران اور روس کے درمیان فوجی تعاون اچھا ہے اور جاری رہے گا۔

 یہ بات محمدجواد ظریف جو روس کے دورے پر ہے، نے آج بروز جمعرات روس کی سپوتنک (Sputnik) نیوز ایجنسی  کو انٹرویو دیتے ہوئے کہی۔

ایرانی اسلحہ کی پابندی کے خاتمے کے بعد ایران اور روس کے مابین فوجی معاہدوں پر دستخط ہونے کے امکان کے بارے میں انہوں نے کہا کہ ایران اور روس کے درمیان اس سلسلے میں بہت اچھی تعاون ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم فوجی شعبے کےبہت معاملات میں خودکفیل ہوگئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کورونا کی موجودہ صورتحال کے پیش نظر بنیادی سامانوں کی تجارت کے لئے "گرین کوریڈور" قائم کرنے  کے لیے روسی صدر ولادیمیر پیوٹن کی تجویز بہت اہم ہے۔

انہوں نے کہا کہ کچھ معاملات میں  ہمیں روس میں اپنے دوستوں اور دوسرے ممالک کے ساتھ اسلحے کے تعاون کی سنجیدہ ضرورتیں ہیں۔

ایرانی وزیر خارجہ  نے گزشتہ روز چوتھی بار کیلیے ماسکو کا دورہ کیا۔

محمد جواد ظریف نے جمعرات کے روز باہمی تعاون اور اعتمادسازی کی تنظیم (CICA) کے وزرائے خارجہ کے ورچوئل اجلاس میں بین الاقوامی معاشی اداروں کے ساتھ ساتھ امیر ممالک سے بھی  سے کوویڈ 19 کی وبا سے نمٹنے کے لئے دیگر ممالک اور بین الاقوامی تنظیموں اور خطوں کو ضروری مالی امداد فراہم کرنے کا مطالبہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ بلا شبہ کوویڈ ۔19 جیسے بڑے چیلنج کے خلاف اجتماعی تعاون کرنے کی ضرورت ہے۔

ظریف نے کہا کہ کورونا کیخلاف جنگ میں یکطرفہ جبرآمیز اقدامات معاشی اور طبی دہشت گردی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مشترکہ چیلنجوں پر قابو پانے کا واحد راستہ جس سے ہماری قوموں کی صحت اور سلامتی کو خطرہ لاحق ہے وہ ہے کہ مشترکہ حل تلاش کرنے کے لئے مل کر کام کریں اور ایران اپنے دوستوں اور پڑوسیوں کو سیکا میں شامل ہونے اور اس اجتماعی مشن میں اپنے تجربات کے تبادلے کے لئے تیار ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 1 =