یورپی یونین میں ایران کی نمائندگی کا عالمی برداری سے فعال موقف اپنانے کا مطالبہ

تہران، ارنا- یورپی یونین میں اسلامی جمہوریہ ایران کی نمائندگی نے امریکہ کیجانب سے ایران کیخلاف پابندیوں کا از سر نو نفاذ کرنے کے دعوے کے رد عمل میں عالمی برادری سے مطالبہ ہے کہ وہ زیادہ سے زیادہ فعال موقف اختیار کریں اور قانون کی حکمرانی کے تحفظ کیلئے مزید فعال موقف اپنائیں۔

یورپی یونین میں ایران کی نمائندگی نے ایک ٹوئٹر پیغام میں مزید کہا کہ عالمی برداری کو قانون کی حکمرانی کے تحفظ سے متعلق خاموش رہنے کے بجائے فعال موقف اپنانا ہوگا۔

اس پیغام میں مزید کہا گیا ہے کہ غنڈہ گردی کیخلاف تنہا الفاظ ہی کافی نہیں ہیں بلکہ قانون کی حکمرانی کے تحفظ کی تمام ممالک پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ امریکی صدر "ڈونلڈ ٹرمپ" ایران کیخلاف اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی پابندیوں کا از سر نو نفاذ کرنے کے خواہاں ہیں اور یہ ایک ایسے وقت ہے جب اقوام متحدہ کے سربراہ "انٹونیو گوٹرش" نے سلامتی کونسل کے نام میں ایک خط میں کہا ہے کہ "غیر یقینی صورتحال" کی بنا پر ایران کیخلاف پابندیوں کا از سر نو نفاذ کرنے کوششوں میں کوئی اقدام نہیں اٹھا سکتے ہیں۔

واضح رہے کہ امریکی وزیر خارجہ "مائیک پمپیو" نے اتوار کے دن ایک بیان میں ایران کیخلاف پابندیوں بشمول ایرانی اسلحے کیخلاف پابندیوں کا از سر نو نفاذ کرنے کا دعوی کیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 2 =