2021 تک ایران کی پیٹرو کیمیکل کی پیداواری گنجائش 100 ملین ٹن تک پہنچ جائے گی

تہران - ارنا - ایرانی وزیر تیل نے کہا ہے کہ ایران کی پیٹرو کیمیکل کی پیداواری صلاحیت سنہ1400 شمسی کے آخر تک 25 ملین ڈالر مالیت کے ساتھ سالانہ 100 ملین ٹن تک پہنچ جائے گی۔

یہ بات بیژن زنگنہ نے آج بروز منگل ایرانی پارلیمنٹ کے ممبروں سے خطاب کرتےہوئے کہی۔

انہوں نے پیش گوئی کی کہ 1404 میں پیٹروکیمیکل کی پیداواری صلاحیت 133 ملین ٹن تک بڑھ جائے گی اور اس کی مالیت 37 بلین ڈالر ہوجائے گی۔

زنگنہ نے کہا کہ گیس کی صنعت اور پیٹروکیمیکل کی صنعت کو اسلامی جمہوریہ کی پیداوار سمجھا اور کہا کہ اگرچہ انقلاب سے قبل تیل کے شعبے میں اقدامات اٹھائے گئے تھے، لیکن گیس اور پیٹروکیمیکل صنعتیں دونوں اسلامی جمہوریہ میں پیدا ہوئی ہیں۔

ایرانی وزیر تیل نے کہا کہ2014 میںپیٹروکیمیکل کی پیداوار 56 ملین ٹن سے بڑھ کر 2019 میں 66 ملین ٹن ہوگئی اور اس سال میں17 دیگر پیٹرو کیمیکل پروجیکٹس کے افتتاح کے ساتھ ایران کی پیٹرو کیمیکل صلاحیت میں، 25 ملین ٹن اضافہ کیا جائے گا۔

انہوںنے کہا کہ 2013 میں ایران کی پٹرول کی پیداواری صلاحیت تقریبا 52 ملین لیٹر تھی جو 2019 میں بڑھ کر 107 ملین لیٹر ہوگئی ہے۔

زنگنہ نے کہا کہ اس وقت دیہی آبادی کا 83٪ اور شہری آبادی کا 99٪ اور مجموعی طور پر ملک کی 94٪ آبادی گیس نیٹ ورک سے منسلک ہے۔

انہوں نے مزیدکہا کہ موجودہ صورتحال میں گیس فراہم کردہ دیہاتوں کی تعداد 2014 میں 14 ہزار دیہات سے بڑھ کر 31 ہزار ہوگئی ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 10 =