پچھلے 6 سالوں کے دوران فری زون علاقوں سے 134 ارب ڈالر کی مصنوعات کو برآمد کیا گیا ہے: صدر روحانی

 تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر ممکلت نے کہا ہے کہ پچھلے 6 سالوں کے دوران، فری زون علاقوں سے 134 ارب ڈالر مصنوعات کی برآمدات ہوئی ہیں۔

 ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر "حسن روحانی" نے آج بروز جمعرات کو فری زون علاقوں میں اقتصادی منصوبوں کی افتتاحی تقریب کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

 انہوں نے سیاحتی، تجارتی اور صنعتی شعبوں میں فری زون علاقوں کی اہمیت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ حالیہ دنوں میں کیش فری زون علاقوں میں گرین ہاوسز، علم پر مبنی کمپینوں اور زارعت کے شعبے میں کچھے منصوبوں کا نفاذ کیا گیا ہے۔

 صدر روحانی نے مزید کہا کہ ہم نے بدستور فری زوں علاقوں کو درآمد کرنے والے علاقوں سے برآمد کرنے علاقوں میں تبدیل کرنے پر زور دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ فری زون علاقوں کو پابندیوں کے دوران معاشی مشکل پر قابوپانے میں اہم کردار حاصل ہے۔

ایرانی صدر نے قشم میں آئل مصنوعات کی برآمدات کا ایک علاقہ قائم کیا گیا جس میں بحری جہاز ایندھن کی فراہمی کیلئے لنگر انداز ہوتے ہیں اور ساتھ ہی آئل مصنوعات کی برآمدات کیلئے انتہائی اہم ہے۔

انہوں نے ارس فری زون علاقے میں 80 ایکڑ کے رقبے پر پھیلے ہوئے ہائیڈروپونک نظام سے ایک گرین ہاوس کے قیام کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یہ مشرق وسطی کے سب سے بڑے گرین ہاوس منصوبوں میں سے ایک ہے جو روزگار کی پیداوار میں انتہائی اہم کردار ادا کر سکتا ہے اور اس کے اکثر سامان برآمدات کی جاتی ہیں۔

ایرانی صدر نے کہا کہ فری زون علاقوں نے نئی شکل اختیار کرلی ہے اور اب جو فیکٹری ان میں قائم کی جاتی ہیں وہ اپنے مصنوعات کو اندروں ملک سمیت بیرون ملک میں بھی برآمد کر سکتی ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ پچھلے 6 سالوں کے دوران، فری زون علاقوں سے 134 ارب ڈالر مصنوعات کی برآمدات ہوئی ہیں جس میں ملکی اور غیر ملکی برآمدات شامل ہیں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 12 =