ایران کو لگاتار دوسالوں سے دنیا میں آئی سی ٹی کی ترقی کی اعلی شرح حاصل

 زنجان، ارنا- ایرانی وزیر برائے انفارمیشن اور ٹیکنالوجی نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران نے لگاتار دوسالوں سے دنیا میں آئی ٹی سی کی ترقی کی اعلی شرح کو حاصل کیا ہے۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد آذری جہرمی" نے بدھ کے روز صوبے زنجان میں آئی ٹی سی کے شعبےمیں سرگرم اقتصادی کارکنوں اور عہدیداروں سے منعقدہ ایک اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر انہوں نے ملک میں مواصلات کے بنیادی ڈھانچوں کی توسیع کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ملک کیخلاف جابرانہ پابندیوں کی وجہ سے بعض شعبوں بشمول آئل مصنوعات اور بینکنگ میں رکاوٹیں حائل ہوگئیں اور بعض شعبوں میں معیشیت کی شرح نمو میں کمی نظر میں آئی۔

 آذری جہرمی نے کہا کہ لیکن ادارہ شماریات اور اسٹیٹ بینک کے اعداد و شمار کے مطابق انفارمیشن اور ٹیکنالوجی کے شعبے میں بہت ترقی دیکھنے میں آئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ سال کی شائع کی گئی رپورٹ کے مطابق انفارمیشن اور ٹیکنالوجی کے شعبے میں معیشتی شرح نمو میں 31 فیصد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے جبکہ آئی سی ٹی کے شعبے میں بھی معیشتی نمو کی شرح 19/5 تھی۔

 آذری جہرمی کا کہنا ہے کہ ملک کی معیشت اور جی ڈی پی کے شعبے میں آئی سی ٹی سیکٹر کا 6۔5 فیصد کا حصہ ہے جس میں سے 4.5 فیصد انفارمیشن اینڈ کمیونیکیشن ٹیکنالوجی کے شعبے سے وابستہ ہے اور باقی 2 فیصد کا حصہ بھی ڈیجٹل اقتصاد سے وابستہ خدمات سے تعلق رکھتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ آئی سی ٹی کی معیشت کا شعبہ ترقی کر رہا ہے اور اس معاشی نمو کے اثرات لوگوں کی زندگیوں میں بھی دیکھے جاسکتے ہیں؛ یہ ٹھوس معاشی نمو کی علامت ہے جس کا ایک بڑا حصہ مواصلات کے بنیادی ڈھانچے کی ترقی کی وجہ سے ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 9 =