ایرانی وزیر صحت کی عالمی برادری سے امریکی پابندیاں کے خاتمے کی اپیل

تہران، ارنا – ایرانی وزیر صحت نے عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل سے امریکی یکطرفہ پابندیوں کے خاتمے کی اپیل کی۔

ایرانی وزیر صحت 'سعید نمکی' نے آج بروز منگل عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر ٹیڈروس گیبریسیوس کو بھیجنے والے ایک خط کہا کہ اب کرونا سے متاثرہ افراد کی صحت کو خطرے میں ڈالنے والی یکطرفہ امریکی پابندیاں کو خاتمہ دینے کا وقت آگیا ہے۔

انہوں نے اس خط میں ان سے اپیل کی کہ ناجائز اور یکطرفہ امریکی پابندیوں جو ایران اور دیگر ممالک کے عوام کی تکلیف اور موت کا سبب بنی ہیں اور عالمی صحت اور صحت کی سلامتی کے لئے اس کے منفی نتائج ہیں، کے خاتمے کے لئے ضروری اقدامات اٹھائیں.

انہوں نے کوویڈ 19 کے خلاف جنگ کیلیے عالمی ادارے صحت کے سربراہ کی کوششوں پر شکریہ اداکرتے ہوئے کرونا سے متعلق ایران کی تازہ ترین صورتحال کے حوالے سے کہا کہ ہم نے پچھلے سات ماہ کے دوران پورے ملک میں اسکریننگ کے تین مرحلے منعقد کیے ہیں جو آخری مرحلے میں جو دو ہفتے قبل سے آغاز ہوا ہے، 28 ملین افراد کی اسکریننگ کی گئی ہے۔

نمکی نے کہا کہ تمام تر کوششوں کے باوجود ملک میں درجنوں تعلیم یافتہ اور پرعزم صحت پیشہ ور افراد جاں بحق ہوگئے اور جمہوریہ اسلامی ایران COVID-19 کے خلاف جامع کوششوں کے باوجود جوہری معاہدے سمیت بین الاقوامی قوانین کی یکطرفہ اور غیرقانونی خلاف ورزی کا سامنا ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 3 =