کوئی رکاوٹ ایران کے منشیات کیخلاف جنگ کے عزم کو مجروح نہیں کرے گی

تہران، ارنا - انسداد منشیات کے ہیڈ کوارٹرز کے دفتر برائے بین الاقوامی تعلقات کے ڈائریکٹر جنرل نے کہا ہے کہ کوئی بھی چیلنج یا رکاوٹ اسلامی جمہوریہ ایران کے منشیات کے خلاف جنگ کے عزم کو مجروح نہیں کرے گی۔

یہ بات "امیر عباس لطفی" نے اتوار کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران علاقائی اور غیرعلاقائی ممالک کے ساتھ انسداد منشیات کے میدان میں بین الاقوامی علاقائی تعاون پر تیار ہے۔
لطفی نے اس بات پر زور دیا کہ منشیات کے خلاف جنگ میں خطے اور دنیا کے ممالک کے لئے نیا چیلنج افغانستان میں" شیشے "صنعتی نشہ آور اشیاء کی پیداوار میں اضافہ کرنا ہے اور دوسالوں سے اب تک اس ملک کے کچھ علاقوں میں یہ صنعتی مواد کی پیداواری پر خبریں شائع کی جا رہی ہیں۔
انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ افغانستان کی جائز حکومت اپنی ذمہ داری کے ساتھ پورے ملک میں قانون کی حکمرانی کو نافذ کرنے میں کامیاب ہوگی۔
انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اس ملک میں کسی بھی صنعتی اور روایتی منشیات کے خاتمے کے مشاہدہ کرنے کے لئے افغانستان کے اقدامات کی کسی بھی سطح پر ضروری مدد فراہم کرنے کے لئے پوری طرح تیار ہے۔
انسداد منشیات ہیڈ کوارٹر کے بین الاقوامی تعلقات کے دفتر کے ڈائریکٹر جنرل نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کو اقوام متحدہ کے ساتھ منشیات کے خلاف تعاون کو تقریبا 20 سال اور مختلف ممالک کے ساتھ قریب 40 سال گزر چکے ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ ایران نے مختلف ممالک ، جن میں 40 سے زیادہ ممالک شامل ہیں، کے ساتھ انسداد منشیات سے متعلق مفاہمت پر دستخط کردیا ہے۔
اسلامی جمہوریہ ایران، منشیات کی روک تھام کے حوالے سے 4 ہزار شہیدوں اور 12 ہزار غازیوں کی جانوں کا نذارنہ دینے سے بین الاقوامی سطح پر منشیات کیخلاف جنگ کا علبمردار ہے جس کا اکثر بین الاقوامی تنظیموں نے بھی اعتراف بھی کیا ہے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 0 =