ایرانی اسپیکر اور پاکستانی سینیٹ کے چیئرمین کا باہمی تعلقات بڑھانے پر زور

تہران، ارنا – ایران اور پاکستان کے اسپیکروں نے نے دوطرفہ سیاسی ، معاشی ، ثقافتی ، تجارت اور پارلیمانی تعاون کی ترقی پر زور دیا۔

 پاکستانی چیئرمین سینیٹ محمد صادق سنجرانی  نے گزشتہ روز ایرانی اسپیکر 'محمد باقر قالیباف کے ساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے کے دوران باہمی تعلقات کے فروغ پر تبادلہ خیال کیا۔
قالیباف نے دونوں ممالک کے مابین دوستانہ اور برادرانہ تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اسلامی جمہوریہ پاکستان ایک دوست اور ہمسایہ ملک کی حیثیت سے اسلامی جمہوریہ ایران کےلیے بہت  اہم ہے لہذا  دونوں ممالک کے مابین تعلقات کی ترقی بھی بہت ہی اہم ہے۔

انہوں نے دونوں ممالک کی پارلیمانوں کے مابین پارلیمانی تعلقات کو فروغ دینے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ خوش قسمتی سے گیارہویں پارلیمنٹ میں ایران پاکستان پارلیمانی دوستی گروپ تشکیل دیا گیا ہے جو یہ دوطرفہ مشاورت اور تعاون کے ساتھ ساتھ علاقائی اور بین الاقوامی فورموں میں دونوں ممالک کے مابین تعلقات کو مستحکم اور مستحکم کرے گا۔

قالیباف نے ایران اور پاکستان کے درمیان لمبی اور مشترکہ سرحد کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ متنوع سرحدی تعاون دونوں ممالک کی سرحدوں کی سلامتی کو بہتر بنانے پر خصوصی اثر ڈالے گا

ایرانی اسپیکر نے سیاسی ، معاشی ، ثقافتی ، تجارتی اور پارلیمانی تعاون کو فروغ دینے کے لئے اپنی تیاری کے ساتھ ساتھ صحت اور طبی شعبوں کے مابین تجربات کے تبادلے اور کورونا کے خلاف جنگ پر زور دیا۔

اس موقع پر پاکستان کے سینیٹ کے اسپیکر محمد صادق سنجرانی نے دونوں ممالک کے مابین پارلیمانی مشاورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ بین الاقوامی تنظیموں میں اسلامی ممالک کے درمیان اتحاد اہم اثرات مرتب کرے گا۔

سنجرانی توسعه همه جانبه مراودات از جمله همکاری های مرزی و اقتصادی میان پاکستان و ایران را از اولویت های کشورش خواند. 

رییس مجلس سنای پاکستان همچنین اقدامات پیشگیرانه و اجرای دستورالعمل های بهداشتی جمهوری اسلامی ایران در امر مبارزه با بیماری کرونا قابل توجه و مهم توصیف کرد.

سنجرانی نے اپنے ملک کی ترجیحات میں سے ایک  پاکستان اور ایران کے مابین سرحدی اور اقتصادی تعاون سمیت کثیر الجہتی تعلقات کی توسیع ہے۔

پاکستان کے سینیٹ کے اسپیکر نے کرونا کے خلاف جنگ میں اسلامی جمہوریہ ایران کے حفاظتی اقدامات اور ان کے نفاذ کو بھی بہت اہم قرار دیا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 7 =