پابندیوں کا ایران میں اطالوی ثقافتی سرگرمیوں پر کوئی اثر نہیں پڑا ہے

تہران، ارنا - ایران میں تعینات اٹلی کے سفیر نے کہا ہے کہ تہران – روم کے درمیان تعلقات خاص طور پر ثقافت اور فن کے میدان میں دیرینہ تعلقات کا حوالہ دیتے ہوئے پابندیوں سے ایران میں اطالوی ثقافتی سرگرمیوں پر کوئی اثر نہیں پڑا ہے۔

یہ بات جوزپہ پرونہ نے منگل کے روز ارنا کے نمائندے کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ پابندیوں نے ثقافتی سرگرمیوں ، پروگراموں اور نمائشوں کو متاثر نہیں کیا ہے اور ہم نے جو بھی منصوبہ بنایا تھا اس پر عمل کیا ہے۔

انہوں نے جو گذشتہ سال جولائی سے ایران میں اطالوی سفارت خانے کا انچارج ہے، منگل کے روز ارنا کے نمائندے کو انٹرویو دیتے ہوئے دیرینہ تہران- روم کے درمیان دیرینہ تعلقات کو تمام شعبوں میں مستحکم کرنے کے لیے اطالوی سفارت خانے کے اقدامات کے بارے میں کہاکہ ایران آنے کے بعد سے ، ہم نے دونوں ممالک کے مابین دوستی کو گہرے بنانے کیلیے بہت سارے کام کیے۔ ثقافتی امور کے میدان میں ہم نے بہت سارے پروجیکٹس انجام دیئے ہیں جو ایرانی عوام اور اداروں نے جن پروگراموں کا خیر مقدم کیا ہے۔

ایران میں اٹلی کے سفیر نے تمام شعبوں میں دونوں ممالک کے مابین کثیرالجہتی تعلقات کو مستحکم کرنے میں میڈیا اور صحافیوں کے بڑے اہم کردار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اطالوی میڈیا حال ہی میں ایران کے بارے میں لکھنے پر بہت دلچسبی رکھتے ہیں۔

 ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 0 =