رواں سال کے دوران ایران میں 5۔1 ملین ٹن فشری پروڈکٹ کی پیداوار کا تخمینہ لگایا گیا ہے

تہران، ارنا- ایران کی فشریز آرگنائزیشن کے سربراہ نے کہا ہے کہ موسم کی صورتحال کے مطابق ملک میں 5۔1 ملین ٹن فشری پروڈکٹ کا تخمینہ لگایا گیا ہے جن میں سے 800 ہزار ٹن سمندری جانوروں کی پرورش اور 700 ہزار ٹن سمندری ماہی گیری سے متعلق ہے۔

ان خیالات کا اظہار "نبی اللہ خون میرزائی" نے پیر کے روز گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ سال کے دوران ایران کے شمالی اور جنوبی سمندروں میں 650 ہزار ٹن سمندری ماہی گیری کی گئی ہے اور اس کے علاوہ 650 ہزار ٹن بھی سمندری جانوروں کی پرورش کی گئی ہے۔

میرزائی نے کہا کہ رواں سال کے دوران پہلی بار کیلئے سمندری جانوروں کی پرورش کا حجم سمندری ماہی گیری سے زیادہ ہے اور آئندہ سالوں میں اس میں مزید سرمایہ کاری کیساتھ اس کی پیداواری مزید اضافہ ہوگا۔

انہوں نے سمندری جانوروں کی پرورش میں توسیع کو فشریز آرگنائزیشن کی ترجیحات میں سے قرار دیتے ہوئے کہا ہمیں وسائل کی صلاحیت کے تناسب سے ماہی گیری اور سمندری ماہی گیری کی سرگرمیوں کو منظم کرنا چاہئے۔

میرزائی نے سمندری جانوروں کی پرورش میں مزید سرمایہ کاری پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اسی صنعت کی توسیع سے روزگار کی فراہمی میں اضافے کیساتھ آبی ذخائر کے استعمال میں کمی میں مدد ملے گی۔

انہوں نے حالیہ سالوں میں سمندری خوراک کے استعمال میں اضافے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ تین سالوں کے دوران سمندری خوراک کی فی کس کھپت 12 کلوکرام تھی جبکہ گزشتہ سال کے دوران سمندری خوراک کی فی کس کھپت 3۔13 کلوگرام اور رواں سال کے دوران بھی 5۔14 کلوگرام تک پہنچ گئی ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 7 =