مسدود شدہ رقم کا واپس لینے کیلئے مختلف طریقوں کا استعمال کرتے ہیں: ظریف

تہران، ارنا- ایرانی وزیر خارجہ نے دوسرے ملکوں میں مسدود شدہ رقم کا واپس لینے کیلئے سامان کی خریداری اور بارٹر سسٹم کا استعمال کرنے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم مسدود شدہ رقم کی واپسی کے لئے بات چیت کریں گے اور اگر ضرورت ہو تو ہم عدالتوں میں قانونی چارہ جوئی کے ذریعے اس مسئلے کا تعاقب کریں گے۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد ظریف" نے آج بروز پیر کو محکمہ خارجہ کے اجلاس میں مختلف ممالک کے بینکوں میں مسدود شدہ رقم سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم مسدود شدہ رقم کی واپسی کے لئے بات چیت کریں گے اور اگر ضرورت ہو تو ہم عدالتوں میں قانونی چارہ جوئی کے ذریعے اس مسئلے کا تعاقب کریں گے۔

ظریف نے کہا کہ دوسرے ملکوں میں مسدود شدہ رقم کا واپس لینے کیلئے سامان کی خریداری اور بارٹر سسٹم کا استعمال کر سکتے ہیں جیسے کہ ہم نے حالیہ سالوں کے دوران دیگر ملکوں میں مسدود شدہ رقم کا واپس لینے کیلئے مختلف طریقوں کا استعمال کیا اور انہیں واپس لے لیا۔

ایرانی وزیر خارجہ نے دوسرے ملکوں میں مسدود شدہ رقم کے کچھ حصہ کو واپس لینے میں کامیابی سے متعلق کہا کہ بعض ممالک نے ہمارے کچھ رقم کا واپس دے دیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 6 =