ایرانی قوم اور حکومت لبنانی عوام کیساتھ شانہ بشانہ کھڑی ہوگی

تہران، ارنا – ایرانی صدر مملکت نے کہا ہے کہ ماضی کی طرح ایرانی قوم اور حکومت ہمیشہ لبنانی عوام اور حکومت کے شانہ بشانہ کھڑی رہے گی اور کسی بھی ریلیف، میڈیکل، دواسازی اور کھانے کی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے تیار ہے۔

ان خیالات کا اظہار "حسن روحانی" نے جمعرات کے روز اپنے لبنانی ہم منصب "میشل عون" کے ساتھ ایک ٹیلی فونگ رابطے میں گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
صدر روحانی نے کہا کہ ایرانی حکومت اس ملک میں بڑے پیمانے پر دھماکے کے بعد لبنان کو خوراک ، ادویات اور صحت کے سازوسامان کی ضروریات فراہم کرنے کے لئے تیار ہے۔
انہوں نے کہا کہ بیروت دھماکہ ایک انتہائی افسوسناک واقعہ تھا اور ایرانی قوم اس المناک واقعے پر لبنانی عوام کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کرتے ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف ، وزیر صحت سعید نمکی ، اور ریڈ کریسنٹ سوسائٹی ایران کے سربراہ کو یہ ذمہ داری سونپی گئی ہے کہ وہ لبنانی ہم منصبوں سے مستقل رابطے میں رہیں اور مدد کے لئے ان کی درخواستوں کا جواب دیں۔
انہوں نے کہا کہ ایرانی قوم اور حکومت لبنانی قوم کی مدد کے لئے کوئی کوششوں سے دریغ نہیں کریں گی۔
 لبنانی صدر نے ایرانی قوم اور حکومت کی ان کی ہمدردی پر شکریہ ادا کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ ان کا ملک اس طرح کی مہربانیوں کی قدر کرتا ہے۔
تاریخ گواہ ہے کہ ایران نے لبنان کی مدد کرنے میں کوئی کوشش سے دریغ نہیں کی اور ایرانی قوم کو اپنے لبنانی ہم منصبوں کے ساتھ برادر اور دوستانہ جذبات کی تعریف کی۔
تفصیلات کے مطابق ، 4 اگست کو بیروت میں بڑے دھماکے نے لبنانی دارالحکومت کا نصف حصہ لرز اٹھا ، ایک سو سے زیادہ افراد ہلاک اور 5000 سے زائد زخمی ہوگئے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 16 =