شام میں امریکہ کیجانب سے تیل کے معاہدے پر دستخط کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے: ایران

تہران، ارنا- ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے شام کی سرزمین پر غیرقانونی قابض فورس کی حیثیت سے کرد گروپ کے ساتھ امریکی تیل معاہدے کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق "سید عباس موسوی" نے امریکہ اور ایک کرد گروپ کے درمیان تیل کے معاہدے پر دستخط کو بین الاقوامی قوانین کیخلاف ورزی سمیت شام کی قومی سالیمت اور خودمختاری کے خلاف قرار دیتے ہوئے اسے سختی سے مذمت کی۔

انہوں نے کہا کہ شام کی سرزمین پر غیرقانونی قابض فورس کی حیثیت سے کرد گروپ کے ساتھ امریکی تیل معاہدے کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے اور یہ اقدام شام کے قدرتی وسائل کو قبضہ کرنے کے سسلسلے میں ہے۔

واضح رہے کہ امریکی ٹی وی الحرہ نے کہا ہے کہ شامی ڈیموکریٹک عسگری پسندوں گروہ کے کمانڈر "مظلوم عبدی" نے ایک امریکی کمپنی سے تیل کے ایک معاہدے پر دستخط کیا ہے۔

شامی محکمہ خارجہ نے بھی اتوار کے روز اس معاہدے کو شامی تیل کی چوری کے مطابق قرار دیتے ہوئے اسے مسترد کردیا۔

اس کے علاوہ ترکی کی محکمہ خارجہ نے بھی اس معاہدے کو بین الاقوامی قوانین کو نظر انداز کرنے کے مطابق قرار دے دیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 5 =