عالمی ادارے صحت کی ایران کے کرونا وائرس کیخلاف اقدامات کی تعریف

ہمدان، ارنا – اسلامی جمہوریہ ایرن میں عالمی ادارے صحت کے نمائندے نے کرونا کے کنٹرول پر زیادہ تر مسائل کو حفاظتی آلات کی فراہمی قرار دیتے ہوئے صوبے ہمدان میں حفاظتی سازوسامان کی پیداواری لائن کے اجرا اور کرونا کے میدان میں تحقیقی مضامین کی اشاعت پر اطمینان کا اظہار کیا ہے۔

یہ بات "کریسٹوف ہملمن" نے پیر کے روز ایرانی صوبے ہمدان کی میڈیکل سائنسز یونیورسٹی آف بورڈ آف ڈائریکٹرز کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے کہا کہ اس تنظیم کا منصوبہ ہے کہ وہ ممالک کو صحت سے متعلق اشیاء درآمد، تشخیصی کٹس تیار اور کرونا سے نمٹنے کے لئے طبی سامان مہیا کرے۔
ہملمن نے کہا کہ عالمی ادارے صحت نے اسپتالوں کو درکار سامان کی فراہمی اور لیبارٹریوں کی صلاحیت کو بڑھانے کے لئے ایرانی وزارت صحت اور طبی تعلیم کی مدد کے لئے اقدامات اٹھائے ہیں۔
انہوں نے "آی سی ای آر پی" منصوبے کے تحت کچھ تعلیمی اور طبی مراکز کے دورے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یہ منصوبہ ایران کی کوویڈ 19 بیماری سے متعلق ردعمل سے متعلق ہے جس میں عالمی ادارہ صحت کا اس وائرس کے تشخیصی آلات کے معیار بلند کرنے کے مقصد سے حفاظتی سازوسامان فراہم کرنے کا معاہدہ ہے۔
عالمی ادارے صحت کے نمائندے نے کہا کہ آج بہت سارے ڈاکٹرز کرونا وائرس کے خلاف جنگ میں سب سے آگے ہیں لہذا  صحت کی تعلیم ، صحت اور صحت کو فروغ دینے کی ضرورت ہے اور ہمیں امید ہے کہ صحت کی خواندگی میں بہتری آئے گی۔
یاد رہے کہ اب تک اسلامی جمہوریہ ایران میں 309 ہزار 437 افراد کرونا وائرس سے مبتلا اور 17 ہزار و 190 افراد بھی جاں بحق ہوگئے ہیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 1 =