پاکستان میں اہل بیت (ع) کی تعلیمات کی اشاعت میں اعلی صلاحیتیں ہیں

بندرعباس، ارنا- پاکستانی شہر کراچی میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے قونصلر نے کہا ہے کہ  پاکستان میں نہج البلاغہ، صحیفہ السجادیہ اور اہل بیت (ع) کو پہچاننے میں اچھا کام کیا گیا ہے اور اس میدان میں بہت سی صلاحیتیں موجود ہیں۔

ان خیالات کا اظہار "سید حسین تقس زادہ" نے منگل کے روز امام سجاد (ع) کانگریس کے خصوصی اور بین الاقوامی پروگراموں کا جائزہ لینے سے متعلق منعقدہ وبینار میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ امام سجاد (ع) نے واقعہ کربلا کے بعد اسلامی معاشرے پر حکمرانی کرنے والے دم گھٹنے والی فضا میں اس رجحان کو زندہ کرنے کیلئے ایک عظیم تحریک شروع کی اور اس حیات نو کو "صحیفہ السجادیہ" کی شکل میں پیش کیا گیا تھا اور اس کتاب کے ذریعے اعلی اور انسانی تعلیمات کو معاشرے کو دستیاب کیا گیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ اسلامی تعلیمات کو روشناس کرانے کیلئے پاکستان کے مختلف شعبوں بشمول ریڈیو اور ٹیلی ویژن نیٹ ورکس پر متعدد میٹنگز، فارمیٹس، ویبنرز، اخباری مضامین  یا میڈیا کانفرنسوں کا انعقاد مؤثر ثابت ہوسکتا ہے۔

تقی زادہ نے امام سجاد (ع) کے خصوصی مرکز میں تیار کردہ مواد کو پاکستان میں ایرانی ثقافتی قونصلر تک رسائی کا مطالبہ کیا تاکہ لوگوں اور دلچسپی رکھنے والوں میں ان کی وضاحت کرسکیں۔

انہوں نے امام سجاد (ع) کی شہادت کے موقع پر ایران کے ساتھ ساتھ پاکستانی شہر کوئٹہ میں حفظان صحت کے تدابیر پر عمل پیرا ہوتے ہوئے عوام کی شرکت کیساتھ ایک وبینار کے انعقاد کا مطالبہ بھی کیا۔

واضح رہے کہ امام سجاد (ع) کانگریس کے خصوصی اور بین الاقوامی پروگراموں کا جائزہ لینے سے متعلق منعقدہ وبینار میں ایرانی وزیر ثقافت سمیت الجیریا، لبنان، جاپان، عراق، ترکمنستان، شام، تھائی لینڈ، بھارت اور عمان جیسے ممالک کے ثقافتی قونصلروں نے حصہ لیا تھا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ امام سجاد (ع) کے خصوصی کانگریس کا آپ کی تعلیمات کو عام کرنے اور اشاعت کے مقصد سے محرم الحرام کے 12 ویں دن سے 25 ویں دن تک ایرانی صوبے ہرمزگان میں انعقاد کیا جائے گا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
8 + 3 =