ایران اور بھارت کے گہرے اور دیرینہ تعلقات ہیں: ایرانی اسپیکر

تہران، ارنا- ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ ایران اور بھارت ایشیا کے دو موثر ممالک ہیں جن کے درمیان گہرے اور دیرینہ تعلقات ہیں۔

ان خیالات کا اظہار "محمد باقر قالیباف" نے پیر کے روز اسلامی جمہوریہ ایران میں تعنیات بھارتی سفیر "گدام دارمندار" سے ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ ایران اور بھارت ایشیا کے دو موثر ممالک ہیں جن کے درمیان گہرے اور دیرینہ تعلقات ہیں اور دونوں ملکوں کے درمیان تعاون بدستور علاقائی اور بین الاقوامی صفحوں میں موثر ثابت ہوگیا ہے۔

قالیباف نے ایران اور بـھارت کے درمیان تعلقات کے فروغ پر امید کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں ثالثی فریق کو دونوں ملکوں کے گہرے اور تاریخی تعلقات میں خلل ڈالنے کی اجازت نہیں دینی چاہیے۔

انہوں نے سیاسی اور ثقافتی شعبوں میں تجارتی تعلقات کے کردار کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ایران اور بھارت کے درمیان تجارتی تعلقات کی پُرانی تاریخ ہے۔

ایرانی اسپیکر نے اپنے بھارتی ہم منصب کو اسلامی جمہوریہ ایران کی باضابطہ دورے کی دعوت بھی کی۔

اس موقع پر بھارتی سفیر نے بھارت کی پارلیمنٹ کے اسپیکر کیجانب سے قالیباف کو ایرانی پارلمنیٹ کی قیادت کا عہدہ سنبھالنے پر مبارکباد کے پیغام کا حوالہ کردیا۔

انہوں نے دونوں ملکوں کے درمیان دوستی اور امن کے معاہدے پر ستخط کی 70 ویں سالگرہ پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اس مناسبت سے بھارتی اسپیکر کو دورہ ایران کرنے کا ارادہ تھا جو کرونا وائرس کے پھیلاؤ کی وجہ سے مسیر نہیں ہوا۔

انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان کا ملک ایران سے تعلقات کے فروغ کے حوالے سے ایرانی حکومت اور پارلیمنٹ سے بدستور رابطے میں رہے گا۔

گدام دارمندرا نے دونوں ملکوں کے پارلیمانی تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ پارلمینٹوں میں قائم مختلف کمیٹیاں اس حوالے سے رابطے میں ہیں۔

انہوں نے قالیباف کیجانب سے اپنے بھارتی ہم منصب کے دورہ ایران کی دعوت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ وہ کرونا وائرس کے بحران پر قابو پانے کے فورا بعد ایران کا دورہ کریں گے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 4 =