صیہونی حکومت کے سوا کسی بھی ملک کیساتھ طویل المدتی تعاون کے لئے تیار ہیں:ایرانی وزیر تیل

تہران، ارنا – ایرانی وزیر تیل نے چین کے ساتھ معاہدے اور اس سے متعلق افواہوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہم صیہونی حکومت کے علاوہ کسی بھی ملک کے ساتھ ایسے معاہدوں پر دستخط کرنے کے لئے تیار ہیں۔

یہ بات بیژن زنگنہ نے آج بروز پیر جنوبی آزادگان آئل فیلڈ کی ترقی کے پردستخط کی تقریب کے موقع پر ارنا کے نمائندے کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ چین کے ساتھ معاہدہ اور اس سے متعلق افواہوں ایک تنازعہ ہے جو بیرون ملک شروع ہوا تھا اور کچھ نے ملک کے اندر اس کی پیروی کی اور ایران اور چین کےمابین 25 سالہ تعاون کی دستاویز کے مسودے کا موضوع ، قرارداد نہیں بلکہ ایک عام معاہدہ ہے۔ ہم صیہونی حکومت کے علاوہ کسی بھی ملک کے ساتھ ایسے معاہدوں پر دستخط کرنے کے لئے تیار ہیں۔

زنگنہ نے کہا کہ ہم نے امریکیوں کو پابندیوں کے دوران ایرانی تیل کی صنعت میں حصہ لینے سے بھی منع نہیں کیا

انہوں نے کہا کہ چین کے ساتھ معاہدے اور اس سے متعلق افواہوں کا موضوع بیرون ملک میں شروع ہونے والا تنازعہ ہے۔

زنگنہ نے مزید کہا کہ پیداوار کے فروغ کے سال میں ایران کی پیٹرو کیمیکل پیداواری صلاحیت میں 25 ملین ٹن کا اضافہ کیا جائے گا ، اور دوسری چھلانگ میں پیٹرو کیمیکل پیداوار 100 ملین ٹن ہوگی اور برآمدات کی مالیت 25 ارب ڈالر ہوگی۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 11 =