ایران میں غیر ملکی پروازوں کی بحالی کی تازہ ترین صورتحال

تہران، ارنا- ایران میں غیر ملکی پرواروں کے از سرنو آغاز کی صورتحال میں بہتری آ رہی ہے اور اب لندن، ایمسٹرڈیم، مانچسٹر، اسٹاک ہوم اور پیرس جانے والی یورپی پروازیں ہفتہ وار چلتی ہیں اور کچھ ہمسایہ ممالک ایرانی ہوائی کمپنیوں کی میزبانی بھی کرتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق، ایرانی ایوی ایشن آرگنائزیشن نے گزشتہ مہینے کے دوران کہا تھا کہ ترکی کی تیاری کے اعلان کیساتھ دونوں ممالک کے درمیان فضائی سرحد کھول دی گئی۔

تاہم  ترکیش ایئرلائن کی موجودگی کی کوئی خبر نہیں ہے جو پہلے امام خمینی ایئر پورٹ سے ایک ہفتہ میں سات سے زیادہ پروازیں چلاتی تھیں اور امام ائیرپورٹ پر یورپی مسافروں کی آمد و رفت میں نمایاں حصہ لیتے ہیں اور اب اور دونوں ممالک کے مابین ملکی ایئر لائنز کی پروازیں جاری ہیں۔

کل رات تک، تبریز، شیراز اور تہران ہوائی اڈوں نے استنبول پروازوں کی میزبانی کی اور چار ملکی کمپنیوں نے صحت کے پروٹوکول کے سلسلے میں صرف ضروری پروازوں کا سلسہ جاری رکھا تھا۔

لیکن ترک حکومت کے مطابق، ایران اور ترکی کے درمیان فضائی سرحد آج (اتوار) کی صبح ایک بار پھر بند کردی گئی تھی اور ثانوی اطلاع تک ایران سے ترکی کے شہروں اور اس کے برعکس کوئی پرواز نہیں چلائی جائے گی۔

تاہم  تہران – دبئی- تہران سے متعلق پروازیں مختلف حالات ہیں اور یہ پروازیں امارات ایئر لائنز کے ذریعہ چلائی جاتی ہیں اور ان پروازوں میں مسافروں کے پاس رہائشی کارڈ ہونا ضروری ہے؛ ماہان ایئرلائن ان ملکی کمپنیوں میں سے ایک ہے جو اسی سمت میں امام خمینی ایئر پورٹ سے نئی پروازیں چلاتی ہے۔

اسلامی جمہوریہ ایران کی ایئر لائنز نے بھی اسی سمت میں نئی ​​پروازوں کا منصوبہ بنایا ہے جو امارات ایوی ایشن آرگنائزیشن کے رہنما خطوط کے مطابق امام خمینی ائیرپورٹ پر مسافروں کو لے جانے پر اقدام کرتے ہیں۔

تاہم ایران ایئر کی یورپی منزلوں کیلئے فلائٹ کی صورتحال قدرے بہتر ہے، لندن، ایمسٹرڈم، مانچسٹر، اسٹاک ہوم اور پیرس کیلئے پروازیں ہفتہ وار بنیادوں پر جاری رہتی ہیں اور جرمن ایئر لائنز کیساتھ ایرانی ایئر کی جرمن پروازوں کو دوبارہ شروع کرنے کیلئے بات چیت میں بہت پیشرفت نظر آئی ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 2 =