15 جولائی، 2020 7:10 PM
Journalist ID: 1917
News Code: 83857178
0 Persons
ایران اور ملائشیا کا بارٹرسسٹم کے تحت تجارت پر زور

تہران، ارنا- ایران اور ملائشیا کے وزرائے خارجہ نے دونوں ملکوں کے درمیان بارٹر سسٹم کے تحت تجارتی لین دین کی ضرورت پر زوردیتے ہوئے ترجیحی تجارت اور مشترکہ اقتصادی کمیشن کے قیام کو حتمی شکل دینے سے اتفاق کیا۔

تفصیلات کے مطابق "محمد جواد ظریف" نے بدھ کے روز اپنے ملائشیا کے ہم منصب "داتو ہشام الدین حسین" سے ویڈیو کانفرنس کرتے ہوئے باہمی دلچسبی امور سمیت علاقائی، بین الاقوامی اور دنیائے اسلام کے مسائل پر بات چیت کی۔

اس موقع پر دونوں فریقین نے باہمی تعلقات کے فروغ کے سلسلے میں دونوں ملکوں کے درمیان بارٹر سسٹم کے تحت تجارتی لین دین کی ضرورت پر زوردیتے ہوئے ترجیحی تجارت اور مشترکہ اقتصادی کمیشن کے قیام کو حتمی شکل دینے سے اتفاق کیا۔

ظریف نے اسلامی تعاون تنظیم میں ملائشیا کی اہم پوزیشن کے پیش نظر اپنے ملائیشیا کے ہم منصب سے مطالبہ کیا کہ وہ یمنی مسئلے کے سیاسی حل کیلئے تعمیری کردار ادا کرے۔

انہوں نے یمن میں قیام امن اور استحکام اور یمنی بحران کے خاتمے سے متعلق ملائشیا کی ہر کسی حکمت عملی کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ یمن میں قیام امن کی بھر پور کوشش کرتے ہیں۔

ایرانی وزیر خارجہ نے فلسطینی عوام کی حمایت میں ملائشیا کے تعمیری موقف کا شکریہ ادا کیا۔

دراین اثنا  داتو ہشام الدین حسین نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان کے ملک کا موقف فلسطین اور یمنی عوام سے متعلق کبھی نہیں بدلے گا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 7 =