ایران جدید طبی سامان برآمد کرنے والا ملک بن گیا ہے: وزیر صحت

تہران، ارنا- ایرانی وزیر صحت نے کہا ہے کہ ملک میں کرونا وائرس کی وجہ سے رونما ہونے والے بحران کے باوجود، ہم اپنے ملکی ماہرین کی کوششوں سے طبی سامان درآمد کرنے والے ملک سے جدید طبی سہولیات تیار اور برآمد کرنے والے ملک میں بدل گئے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار "سعید نمکی" نے آج بروز ہفتے کو رازی میڈیکل سائنس یونیورسٹی میں منعقدہ وبینار کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم پچھلے دو مہینوں کے دوران، ملک میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے باجود تعلیم یافتہ طبقے اور میڈیکل یونیورسٹیوں اور ان کے فارغ التحصیل افراد کی کاوشوں کی بدولت طبی سامان اور سازوسامان درآمد کرنے والے ملک سے جدید سازوسامان برآمد کرنے والے ملک میں بدلنے میں کامیاب ہوگئے۔

نمکی نے کہا ہم نے اللہ رب العزت کی مدد اور طبی ٹیموں کی کوششوں سے 2 مہینوں کے اندر اندر ملک میں کوویڈ- 19 کے پھیلاؤ کا کنٹرول کیا اور اس حوالے سے ترقی یافتہ ملکوں کو پیچھے چھوڑ دیا۔

انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے آئی سی یو اور عام بستروں کی تشکیل میں مادی سرمایہ کاری کی مقدار میں ملک کے اشارے کو ایران کے پیچھے رہنے والے ممالک کے اشارے سے موازنہ نہیں کر سکتے اور یہ صرف اس ملک کے عظیم طبی سائنسدانوں کی کوشش، ہمت، غیرت سے مسیر ہوا۔

 ایرانی وزیر صحت نے کرونا وائرس کیخلاف مقابلہ کرنے کیلئے طبی ٹیموں اور ہسپتال کے عملے اور دیگر جد و جہد کرنے والوں کی کوششوں کو بھی سراہا اور ان کا شکریہ ادا کیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 13 =