ٹرمپ کی شکست کیساتھ جوہری معاہدے میں امریکہ کی واپسی کا امکان ہے

لندن، ارنا – بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی (آئی اے ای اے) میں برطانیہ کے سابق نمائندے نے کہا کہ امریکہ کے آئندہ صدارتی انتخابات میں ڈونلڈ ٹرمپ کی شکست کیساتھ جوہری معاہدے میں واشنگٹن کی دوبارہ واپسی کا امکان ہے۔ لہذا اس وقت تک تہران کے لئے صبر کرنا بہتر ہے۔

 یہ بات پیتر جنکینز نے آج بروز ہفتہ ارنا کے نمائندے کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے جوہری معاہدے سے متعلق حالیہ تبدیلیاں، بورڈ آف گورنرز میں یوروپی ترویکا کی تجویز کردہ قرارداد کو منظور کرنا، سلامتی کونسل کا اجلاس، ایرانی اسلحے پر  پابندیوں میں توسیع کے لئے امریکی جدو جہد کے حوالے سے اپنے موقف کی وضاحت کی۔

انہوں نے جوہری معاہدے سے امریکی دستبرداری کو غیرقانونی قرار دیتے ہوئے اعتراف کیا کہ اب تک، ایران کو اس معاہدے کے معاشی فوائد سے کوئی فائدہ نہیں ہوا ہے۔      

اس برطانوی سفارتکار کا خیال ہے کہ جوہری معاہدے کے چھوڑنے سے امریکہ کو کوئی فائدہ نہیں ہوا ہے اور یہ ملک اپنی نرم طاقت سے محروم ہوگیا ہے۔

جکینز نے عالمی ایٹمی ایجنسی کے بورڈ آف گورنرز میں لندن ، پیرس اور برلن کی تجویز کردہ قرارداد کو غیرضروری قرار دیتے ہوئے مزید کہا کہ وہ ایرانی پریشانیوں کو سمجھتا ہے اور ایران کو اپنی پریشانیوں کو دیگر فریقین  اور IAEA بورڈ تک پہنچانے کا راستہ تلاش کرنا چاہئے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 7 =