ایرانی محکمہ تعاون اور یونیسف کا کرونا وائرس کی روک تھام پر تعاون

تہران، ارنا- ایرانی محکمہ برائے تعاون، لیبر اور سماجی بہبود اور اقوام متحدہ کے ادارہ برائے اطفال (یونیسف) نے کرونا وائرس کی روک تھام پر مشترکہ تعاون پر اتفاق کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایرانی وزارت برائے تعاون، لیبر اور سماجی بہبود کے سربراہ "احمد میدری" نے آج بروز ہفتے کو اقوام متحدہ کے ادارہ برائے اطفال کے سربراہ "مندیپ اوبرایان" سے ویڈیو کانفرنس کیا۔

اس موقع پر میدری نے 2019۔2020 کے منصوبوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ان پروگراموں میں بچوں اور بڑوں کے لئے تکنیکی ڈیزائن اور قومی کثیرالجہتی غربت مانیٹرنگ سسٹم کی تشکیل، بچوں کی ضروریات کی بروقت شناخت اور جواب دینے کیلئے ایک نظام متعارف کروانا اور بچوں سے حساس شواہد پر مبنی نظام کے ڈیزائن اور معاشرتی مدد کے منصوبوں کیلئے تکنیکی مدد فراہم کرنا شامل ہیں۔

 انہوں نے 2020 کے پروگرام کے تحت صوبے سیستان اور بلوچیستان میں اسکول چھوڑنے والے بچوں، خوراک کی حفاظت  اور حاملہ خواتین اور نرسنگ ماؤں کیلئے مالی تعاون جیسے کیس اسٹڈیز کا حوالہ دیا۔

انہوں نے اقوام متحدہ کیجانب سے بچوں کیلئے دی گئی صحت کی مصنوعات کو ان کے درمیان بانٹے کو کرونا وائس کی روک تھام کے اقدامات میں سے قرار دے دیا۔

میدری نے کوویڈ- 19 کیخلاف مقابلہ کرنے کیلئے ایرانی تجربات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے اس حوالے سے ضروت مندوں کو مالی امداد بھی کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس حوالے سے 22 ملین سے زائد ایرانی خاندان کو 10 لاکھ کا مالی قرضہ دیا گیا۔

اس موقع پر اقوام متحدہ کے ادارے برائے اطفال کے سربراہ نے اس ادارے سے ایران کی مختلف تنظیموں کے تعاون پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کرونا وائرس سے متعلق ایران سے ہر کسی طرح کے تعاون پر آمادگی کا اظہار کرلیا۔

انہوں نے کہا کہ اس ادارے نے ایرانی اطفال کی دنیا میں آواز بننے کی کوشش کی ہے اور اس حوالے سے کسی کوشش سے دریغ نہیں کیا ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 5 =