ایران کا اسلامی اتحاد کو مستحکم کرنے سے متعلق عمران خان کے موقف کا خیر مقدم

اسلام آباد، ارنا- پاکستان میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر نے اسلامی اتحاد کو مستحکم کرنے کے مقصد سے علاقائی تناؤ کے خاتمے کی کوششوں سے متعلق پاکستانی وزیر اعظم کے حالیہ بیانات کا خیر مقدم کیا۔

ان خیالات کا اظہار "سید محمد علی حسینی" نے آج بروز جمعہ کو اردو زبان میں ایک ٹوئٹر پیغام میں کیا۔

انہوں نے گزشتہ روز کے دوران، پاکستانی قومی اسمبلی میں وزیر اعظم عمران کے بیانات پر تبصرہ کرتے ہوئے ہم گزشتہ کی طرح اسلامی اتحاد کی تقویت اور مسلمانوں کے مفادات کی فراہمی سے متعلق عمران خان کے تعمیری موقف کو سراہتے ہیں۔

حسینی نے علاقائی تناؤ کے خاتمے سے متعلق پاکستانی وزیر اعظم کے موقف کی حمایت کی۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ عمران خان نے جمعرات کے روز قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے اسلام آباد کیجانب سے علاقے کی کشیدگی کے خاتمے کی کوششوں کا ذکر کیا اور کہا کہ گزشتہ میں کچھ اس طرح کی کوششیں کی گئی تھیں جن کا سلسلہ جاری ہے۔

انہوں نے مزید کہا تھا کہ پاکستان کے سعودی عرب سے بہت اچھے اور برادرانہ تعلقات ہیں اور ایران ہمارا ہمسایہ ملک ہے؛ ہم دونوں ممالک کے درمیان تعلقات بہتر بنانے کے لئے اپنا کردار ادا کر رہے ہیں۔

عمران خان نے کسی خاص فریق کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ بعض فریقین ایران اور سعودی عرب کے میان تعلقات میں بہتری آنے کے خواہاں نہیں ہیں۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاکستانی وزیر اعظم نے اکتبر مہینے کے دوران علاقے میں قیام امن اور سلامتی کے مقصد سے ایران کا دورہ کیا جہاں انہوں نے سپریم لیڈر، صدر مملکت اور وزیر خارجہ سے الگ الگ ملاقاتیں کیں۔  

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 14 =