پانچ نئے غیر ملکی سفیروں نے ایرانی صدر کو اپنی اسناد تقرری پیش کیں

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر ممالک نے ایران اور کوریا کے درمیان تعلقات کے فروغ کو دونوں ملکوں اور علاقے کے مفادات میں قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں امریکی جبر اور غنڈہ گری کیخلاف کہیں زیادہ مضبوطی سے مقابلہ کرنا ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق، ایران میں تعینات جنوبی کوریا کے نئے سفیر "ہان سونگ او" نے آج بروز بدھ کو ڈاکٹر حسن روحانی کیساتھ ایک ملاقات میں ان کو اپنی اسناد تقرری پیش کیں۔

اس موقع پر صدر روحانی نے اسلامی انقلاب کے ابتدا ہی سے اب تک دونوں ملکوں کے درمیان قریبی تعلقات کا ذکر کرتے ہوے اس امید کا اظہار کردیا کہ مشترکہ کوششوں سے باہمی تعلقات کی سطح میں مزید اضافہ ہوجائے گا۔

انہوں نے امریکہ کو دونوں ملکوں کا مشترکہ دشمن قرار دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے بدستور ایران اور جنوبی کوریا جیسے ملکوں  کیخلاف ظلم کی ہے اور ہمیں امریکی جبر اور غنڈہ گری کیخلاف کہیں زیادہ مضبوطی سے مقابلہ کرنا ہوگا۔

*** ایران میں تعینات بلغاریہ کی نئی خاتون سفیر "نیکولینا کنوا" نے بھی صدر روحانی کو اپنی اسناد تقرری پیش کیں، اس موقع پر ایرانی صدر نے فارسی زبان پر بلغاریہ کی خاتون سفیر کی گرفت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ فارسی کی زبان اور ادب میں آپ کی دلچسبی کے پیش نظر ہمیں مستقبل میں تہران اور صوفیہ کے تعلقات کے درمیان مثب تبدیلی نظر آئے گی۔

*** تہران میں تعینات نکاراگوا کے نئے سفیر "ایساک لنین براووجین" نے بھی بدھ کے روز ایرانی صدر کو اسناد تقرری پیش کیں؛ در این اثنا صدر روحانی نے دونوں ملکوں کے درمیان قریبی تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے تمام شعبوں میں تعاون کی تقویت کی ضرورت پر زور دیا۔

*** ایران میں تعینات ہنگری کے نئے سفیر "زولتان وارگا ہاسونیتس" نے بھی صدر روحانی کو اپنی اسناد تقرری پیش کی؛ اس موقع پر صدرورحانی نے ہنگری کو یورپ کے براعظم میں ایران کے دوست قرار دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کردیا کہ مستقبل میں باہمی تعلقات میں مزید اضافہ ہوجائے گا۔

*** اسلامی جمہوریہ ایران میں تعینات پاکستانی سفیر "رحیم حیات قریشی" نے آج بروز بدھ کو ڈاکٹر حسن روحانی کیساتھ ایک ملاقات میں ان کو اپنی اسناد تقرری پیش کیں؛ اس موقع پر صدر روحانی نے دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات کے فروغ پر زور دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کردیا کہ مشترکہ سرحدوں کی سیکورٹی کی فراہمی میں باہمی تعاون میں مزید اضافہ ہوجائے گا۔

واضح رہے کہ ان الگ الگ ملاقاتوں میں پاکستان، جنوبی کوریا، بلغاریہ، نکاراگوا اور ہنگری کے نئے سفیروں نے ایران سے تعلقات کے فروغ پر زور دیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 10 =