ایران کا انسداد منشیات پر پابندیوں کے بُرے اثرات کو ہٹانے کی ضرورت پر زور

لندن، ارنا- ویانا کی بین الاقوامی تنظیموں میں تعنیات اسلامی جمہوریہ ایران کے مستقل مندوب نے  پابندیوں کی وجہ سے انسداد منشیات کی راہ میں حائل رکاوٹوں اور ان کے بُرے اثرات کو دور کرنے کیلئے عملی اقدامات اٹھانے اور موثر حکمت عملی اپنانے کی ضرورت پر زور دیا۔

ان خیالات کا اظہار "کاظم غریب آبادی" نے آج بروز بدھ کو چین اور 77 ترقی پذیر ممالک کے سفیروں سے اقوام متحدہ کے دفتر برائے انسداد منشیات اور جرائم کی روک تھام کے امور کے سربراہ کیساتھ منعقدہ ایک اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے ترقی پذیر ممالک کی درپیش چیلنجوں اور ان کی نوعیت بالخصوص منشیات اور سائبر کرائم کے شعبوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ  گروپ 77 کے رکن ممبروں کیجانب سے موجودہ سنگین چیلنجوں سے نمٹنے کے سلسلے میں ایک دوسرے کی مدد سے متعلق ایک جامع اور متفقہ نقطہ نظر کی تیاری اور ان پر عمل درآمد کرنے کی ضرورت ہے۔

ایرانی سفیر نے کہا کہ مختلف ممالک میں کرونا وائرس کے اثرات مختلف ہوتے ہیں جن سے عالمی عدم استحکام، غربت، جرائم اور عدم مساوات میں اضافے کا امکان ہے لہذا؛ ان چیلنجوں پر قابو پانے کیلئے خود قربانی اور اتحاد کی ضرورت ہے۔

انہوں نے ترقی پذیر ممالک کو نئی ٹیکنالوجیوں اور ابھرتے ہوئے خطرات سے پیدا ہونے والے چیلنجوں اور مواقع سے متعلق مناسب اقدامات کو سمجھنے اور اپنانے میں مدد دینے کی اہمیت کی یاد دہانی کرائی۔

غریب آبادی نے ترقی پزیر ممالک کی تکنیکی مدد کو مستحکم کرنے کیلئے کافی، پیش قیاسی اور پائیدار وسائل اور بجٹ کی فراہمی کی اہمیت پر زور دیا۔

انہوں نے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے دوران بعض ممالک کیجانب سے بین الاقوامی ور انسانی حقوق کیخلاف اٹھائے گئے یکطرفہ اقدامات کو اجتماعی تعاون کی راہ میں رکاوٹ قرار دیتے ہوئے  کہا کہ ان جیسے اقدامات منشیات کیخلاف جنگ اور جرائم کی روک تھام کی راہ میں سنگین رکاوٹیں حائل کردیتے ہیں۔

غریب آبادی نے بین الاقوامی برادری بشمول اقوام متحدہ کے دفتر برائے انسداد منشیات اور جرائم کی روک تھام سے مطالبہ کیا کہ وہ ترقی پذیر ممالک جو انسداد منشیات کی راہ میں کوشش کرتے ہیں، کیخلاف یکطرفہ اقدامات کی مذمت کریں اور ان کے بُرے اثرات کو دور کرنے کیلئے عملی اقدامات اٹھائیں اور موثر حکمت عملی اپنائیں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 2 =