سرحدیں کھولنے سے ایران کی غیر تیل برآمدات میں اضافہ ہوگا

تہران، ارنا - ان دنوں ایران میں سرحدی خطوط جسے ملک میں کرونا وائرس پھیلنے کے ساتھ بند کردیا گیا ہے ، آہستہ آہستہ دوبارہ کھول کی جائيں گی لہذآ توقع ہے کہ آنے والے مہینوں میں ملک کی غیر تیل برآمدات میں اضافہ ہوگا۔

کرونا وائرس کے خلاف جنگ میں سرحدوں کو بند کرنا مختلف ممالک کا پہلا رد عمل تھا۔
کرونا وائرس وبائی بیماری کے پھیلاؤ کی وجہ سے زیادہ تر ممالک نے غیر ملکی شہریوں کے داخلے پر پابندی عائد کردی ہے۔
عالمی ادارہ صحت فی الحال کرونا وائرس کے درمیان زندگی کے تسلسل پر زور دے رہا ہے ، اور ممالک آہستہ آہستہ حفظان صحت کے پروٹوکول کی تعمیل میں اپنی تجارتی صورتحال کو دوبارہ شروع کررہے ہیں۔
وہ معاشی نقصان کو کرونا وائرس سے محدود کرنے کی کوشش کریں گے۔
دوطرفہ معاہدوں کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران، افغانستان ، پاکستان ، ترکی ، عراق اور خلیجی ممالک جیسے پڑوسی ممالک کے ساتھ تجارتی تبادلے کرتے ہیں۔
دنیا میں کرونا وائرس کے انفیکشن کا پھیلاؤ جاری ہے اب تک دنیا بھر میں 9 ملین سے زائد افراد اس بیماری کا شکار ہوگئے ہیں۔
ایرانی محکمہ صحت کے مطابق اب تک مجموعی طور پر 207 ہزار و 525 افراد کوویڈ-19 کا شکار ہوچکے ہیں جن میں سے 166 ہزار و 427 افراد صحت یاب ہوگئے ہیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 4 =