چین کا عالمی ایٹمی ادارے کے بورڈ آف گورنرز کو ایران مخالف قرارداد پر خبردار

لندن، ارنا – عالمی ایٹمی ادارے کے بورڈ آف گورنرز میں چینی نمائندے نے خبردار کیا کہ ایران مخالف معاہدہ نہ صرف جوہری معاہدے کو بلکہ جوہری ہتھیاروں کے عدم پھیلاؤ کے نظام کو بھی تباہ کرے گا۔

بین الاقوامی تنظیموں میں  نائب چینی کے نائب سفیر نے 'ہوایشنگ دای' نے کہا کہ موجودہ صورتحال میں ، ایران کے جوہری معاہدے کے بچانے اور نفاذ کرنا ایرانی ایٹمی پروگرام کے حل کرنے کا بہترین طریقہ ہے۔

انہوں نےجوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کو یکطرفہ غنڈہ گردی" قرار دیا جس سے تناؤ پیدا ہوا ہے۔

چینی عہدیدار نے امریکہ سے جوہری معاہدے میں اپنے وعدوں اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد کے تحت اپنے وعدوں کو پورا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

چینی نمائندے نے کہا کہ ایران واشنگٹن کی زیادہ سے زیادہ دبا‎ؤ' کی پالیسی کے ردعمل پر اپنے جوہری وعدوں کو کم کردیا اور تہران نے ہمیشہ کہا ہے کہ پابندیوں کی منسوخی اور جوہری معاہدے کے فوائد سے فائدہ اٹھانے کی صورت میں وہ معاہدے میں واپس آئے گا۔

انہوں نے آئی اے ای اے اور ایران کے مابین تنازعات کے فوری حل کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے مزید کہا کہ چین اس صورتحال پر پچھتاوا ہے اور ایران کے جائز پریشانیوں کو سمجھتا ہے۔

ایران نے ہمیشہ صبر اور تحمل کا مظاہرہ کر کے  این پی ٹی معاہدوں کے دائرہ کار میں اپنے وعدوں اور سیف گارڈ کے معاہدے پر عمل درآمد کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اپنا ملک جوہری معاہدے کے دیگر فریقین کیساتھ اس معاہدے کے بچانے اور ایرانی جوہری مسئلے کے سیاسی حل کے لئے کوشش کرے گا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 9 =