شامی وزیر اعظم اور ایرانی وفد کی معاشی تعاون پر بات چیت

تہران، ارنا- شام کے وزیر اعظم نے دمشق کے دورے پر آئے ہوئے ایرانی وفد سے ایک ملاقات میں معاشی تعلقات کے فروغ سے متعلق بات چیت کی۔

تفصیلات کے مطابق، ایران کیساتھ شام اور عراق کے معاشی تعلقات کے فروغ کے چیف "حسن دانایی فر" کی قیادت میں ایرانی وفد نے آج بروز بدھ کو شامی وزیر اعظم "حسین عرنوس" سے ملاقات کی۔

اس موقع پر شامی وزیر اعظم نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان معاشی تعلقات کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ان کا ملک، خوراک اور زراعت کے شعبوں کے فروغ کی منصوبہ بندی کر رہا ہے تا کہ شامی عوام ظالمانہ پابندیوں اور ناکہ بندی کے سامنے مزید مزاحمت کر سکیں۔

اس موقع پر نائب ایرانی صدر کے مشیر نے اس بات پر زور دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران معاشی مشکلات پر قابوپانے کیلئے شامی حکومت اور عوام کا ساتھ دے گا۔

دانایی فر نے مزید کہا کہ ایرانی وفد کے دورہ شام کا مقصد در اصل دمشق کی مزید معاشی امداد ہے۔

انہوں نے باہمی معاشی تعاون کی راہ میں حائل رکاٹوں کو دور کرنے کیلئے دونوں ملکوں کے درمیان مزید ہم آہنگی کی ضرورت پر زور دیا۔

اس کے علاوہ دونوں فریقین نے صحت، سرمایہ کاری اور بینادی ڈھانچوں کے شعبوں پر تعاون سے متعلق بات چیت کی۔

منعقدہ اس اجلاس میں شام میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر "جواد ترک آبادی" اور شامی حکومت کے کابینہ کے سیکرٹری جنرل "قیس خضر" بھی شریک تھے۔

واضح رہے کہ شامی محکمہ خارجہ نے منگل کے روز قانون "قیصر" کے تحت شام کیخلاف امریکی ظالمانہ پابندیوں میں مزید اضافے کی سختی سے مذمت کرتے ہوئے اسے انسانی حقوق اور بین الاقوامی قوانین کی کھلی خلاف ورزی قرار دے دیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 0 =